کووِڈ ۔19وَبا کے د وران کشمیرمیں محکمہ باغبانی کی سرگرمیاں جاری
چری فصل کی فروخت کیلئے اِقدامات ،4لاکھ روٹ سٹاک لگائے گئے 51ہیکٹر اراضی نجی شعبہ کے تحت ہائی ڈینسٹی پلانٹیشن کے دائرے لائے گئے

 جموں/محکمہ باغبانی نے کووِڈ۔19وَباکے دوران وادی کشمیر میں میوہ اُگانے والوں کو مختلف باغبانی سرگرمیوں کے لئے سہولیات فراہم کرنے اور محکمہ کی نرسریوں کے لئے دیکھ ریکھ کی سرگرمیاں حکومت کی جاری ایس او پیز اور رہنما خطوط پر کار بند رہ کر جاری رکھ رکھی ہوئی ہے۔باغ مالکان کے لئے مؤثر خدمات فراہم کرنے کے لئے محکمہ باغبانی کشمیر اپنے تمام ذیلی دفاترکے ساتھ معمول کے مطابق کام کررہا ہے۔رہنما خطوط کے تحت محکمہ باغبانی کے دفاتر میں کم سے کم اَفرادی قوت کی خدمات کو بروئے کار لایا اور باغ مالکان کی مدد فراہم کرنے کے لئے ہر ممکن کوشش کی۔اَفرادی قوت کی خدمات کی حصول کے لئے محکمہ کے ضلع سربراہان نے اپنے ماتحت عملے کے لئے ڈیوٹی روسٹر مرتب کیا۔ عملے نے باغ مالکان کو بروقت باغبانی سرگرمیوں کو انجام دینے کے لئے مدد فراہم کی ۔محکمہ نے ماتحت عملے کے لئے کام کاج کی جگہ پر صحت مند ماحول یقینی بنایا۔محکمہ نے تمام محکمانہ کھیتوں اور نرسریوں کی معقول دیکھ ریکھ بھی یقینی بنائی ۔اِسی طرح زرعی آلات اور مشینری کے سیل اور سروس مراکز بھی ہنر مند اَفرادی قوت کے ساتھ چالو رہے ۔محکمہ نے باغ مالکان کی سہولیت کے لئے جراثیم کُش ادویات اور کھادیں بیچنے والوں کو تجارت جاری رکھنے میں ہرممکن مدد فراہم کی۔اِس کے علاوہ محکمہ نے باغ مالکان کو اُنہیں اپنے باغات تک لے جانے اور وہاں باغبانی سرگرمیاں بروقت انجام دینے میں بھی بھرپور مدد کی ۔ صوبائی و ضلع اِنتظامیہ کے تعاون سے وادی کشمیر کے تمام اضلاع میں ہائی ڈینسٹی باغات قائم کرنے کا کام نجی صنعت کاروں کے تعاون سے یقینی بنایا گیا۔میوہ اُگانے والوں کو ان کی میوہ فصل فروخت کرنے کے لئے محکمہ نے کولڈ سٹوروں سے میوہ جات سے بھری گاڑیوں کے بلا رُکاوٹ نقل و حمل میں بھی مدد کی۔میوہ اُگانے والوں کی سہولیت کے لئے محکمہ نے ایک اہم قدم کے طور پر چری فصل کی فروخت اور مارکیٹنگ کے لئے کوشش شروع کی ہے اور اِس ضمن میں حکومت کو منصوبہ پیش کیا گیا ہے۔میوہ اُگانے والوں کو تکنیکی یا کسی اور طرح کی مدد دستیاب رکھنے کے لئے محکمہ نے ڈائریکٹوریٹ اور تمام ضلع صدر مقامات پر ہیلپ لائنز قائم کی ہیں ۔ اِس کے علاوہ زونل ،ضلع اور صوبائی سطح پر ویٹس ایپ گروپ بھی قائم کئے گئے ہیں تاکہ اُنہیں بروقت مدد طلب کرنے میں کوئی دشواری پیش نہ آئے۔دریں اثنأوادی کے تمام اضلاع میںمیوہ اُگانے والوں میں سیب میوہ بیمار یوں سے بچانے کے لئے سپرے شیڈکتابچہ اور پوسٹروں کی صورت میں تقسیم کئے گئے۔اِس کے علاوہ محکمہ نے نیدر لینڈس سے درآمد کئے گئے 2.20لاکھ کلونل روٹ سٹاک اپنے زینہ پورہ فارم میں لگائے ہیں جبکہ نجی شعبہ کے تحت 51ہیکٹر اراضی کو ہائی ڈینسٹی پلانٹیشن کے دائرے میں لایا ہے۔اِس کے علاوہ اِسی مد ت کے دوران محکمہ نے وادی کے مختلف اضلاع میں محکمہ کی نرسریوں میں قریباً 4لاکھ روٹ سٹاک اور دیگر پودے لگائے ہیں۔

مزید دیکهے

متعلقہ خبریں