ہڑتال اور احتجاجی مظاہروں کے بعد پلوامہ میں معمولاتِ زندگی بحال- کاروباری سرگرمیاں شروع، بازاروںمیں غیر معمولی چہل پہل

20 اپريل 2017

سرینگر/ڈگری کالج پلوامہ میں طلبہ پر طاقت کے استعمال کے کے خلاف 4روز تک ہڑتال اور احتجاجی مظاہروں کے بعد بدھ کو پلوامہ میں زندگی معمول پر آگئی جبکہ کاروباری سرگرمیاں بحال ہونے سے بازاروں میں غیر معمولی بھیڑ دیکھنے کو ملی۔ کرنٹ نیوز آف انڈیاکے مطابق کے مطابق سنیچروار کے دوپہر ڈگری کالج پلوامہ میں طلبہ اور فورسز کے درمیان پر تشدد جھڑپوں کے دوران طلبہ پر طاقت کے استعمال کے نتیجے میں سو کے قریب طلبہ زخمی ہوگئے تھے جس کے خلاف قصبہ پلوامہ میں مسلسل چار دنوں تک مکمل ہڑتال کے بیچ احتجاجی مظاہروں کا سلسلہ جاری رہا ۔ہرتا ل اور پابندیوں کے بعد بدھ کو قصبہ میں معمو لات دوبارہ بحال ہوئے اور کاروباری اور ٹرانسپورٹ سرگرمیاں شروع ہوئیں جبکہ حکام نے دوران شب ہی پولیس او فورسز کی تعیناتی ہٹادی تھی۔نمائندے کے مطابق 4روزہ ہڑتال کے بعد دکانیں اور کاروباری مراکز کے ساتھ ساتھ سکول اور سرکاری و غیر سرکاری دفاتر میں معمول میں سرگرمیاں شروع ہوئیں اور ٹریفک کی روانی بھی بحال ہوگئی۔ اس دوران لوگوں کی ایک بڑی تعداد نے بازاروں کا رخ کیا اور اشیائے ضروریہ کی خریداری کی جس کے نتیجے میں اہم بازاروں میں لوگوں کی غیر معمولی بھیڑ اور چہل پہل نظر آئی۔

تبصرے