وادی کشمیر میں 3Gاور 4G موبائیل انٹرنیٹ سروس ہنوزمعطل- کالج دوسرے روز بھی بند ، درس و تدریس کا کام بری طرح متاثر

20 اپريل 2017

سرینگر/کالجوں طلبہ کی طرف سے احتجاجی مظاہروں کے بعد وادی کشمیر میں مواصلاتی کمپنیوں کی 3Gاور 4G موبائیل انٹرنیٹ سروس مسلسل تیسرے روز بھی بند رہی ۔جبکہ صوبائی انتظامیہ کی طرف سے تمام اعلیٰ تعلیمی اداروں کو بندرکھنے کے احکامات کے بعد بدھ کو کشمیر کے تمام کالجوںدوسرے دن بھی درس و تدریس کا کام متاثر رہا ۔کرنٹ نیوز آف انڈیا کے مطابق ڈگری کالج پلوامہ میں طلبہ پر فورسز تشدد کے بعد وادی کشمیر کے کالجوں میں احتجاجی مظاہروں اور فورسز اور طلبہ کے درمیان پر تشدد جھڑپوں کے بعد سوشل میڈیا پر ویڈیز سوشل میڈیا پر وائرل ہونے کے بعد سوموار کے بعد دوپہر تمام مواصلاتی کمپنیوں نے 3Gاور 4Gموبائیل انٹر نیٹ سروس بند کی جوبھد کو بھی بند رہی ۔اس ضمن میں انتظامیہ کی طرف سے مواصلاتی کمپنیوں کو دی گئی ہدایات کے مطابق موبائیل انٹرنیٹ خدمات مکمل طور بند کردی گئی ۔موبائیل انٹرنیٹ سروس کو معطل کر دیا گیا اور پابندی کا اطلاق بدھ کو تیسرے دن بھر جاری رہا جس کے نتیجے میں صحافتی ، پیشہ وارانہ اور کاروبار ی اداروں کو سخت مشکلات کا سامنا کرنا پڑا۔البتہ اس دوران براڈ بینڈ سروس پر کوئی اثر نہیں پڑا۔ادھر امن و قانون کی صورتحال کو بر قرار رکھنے کیلئے صوبائی انتظامیہ نے منگل کو ہی اعلان کیا تھا کہ بدھ کو تمام اعلیٰ کالج درس و تدریس کیلئے بند رہیں گے ۔


تمام کالجوں میں عام تعطیل کے اعلان سے بدھ کو وادی کے تمام اعلیٰ تعلیمی اداروں میں مسلسل دوسرے روز بھی درس و تدریس کی سرگرمیاں متاثر رہی ۔تاہم یونیورسٹیوں میں کام کاج حسب معمول جاری رہا ۔

تبصرے