نوجوانوں کی قبروں پر بنگلے تعمیرکئے گئے مفادات کیلئے بچوں کو سنگباری کیلئے اُکسایا جارہا ہے: مظفر بیگ

20 مارچ 2017 (06:15)

سرینگرکے این ایس ممبر پارلیمنٹ مظفر حسین بیگ نے الیکشن مخالف مزاحمتی لیڈران کو سخت ہدف تنقیدبناتے ہوئے الزام لگایا کہ حریت لیڈروں نے نوجوانوں کے مزار بنا کر اپنے لئے عالیشان بنگلے تعمیر کئے۔ اگر میرے پاس حریت لیڈروں جیسی دولت ہوتی تو میں معصوم نوجوانوں کو پتھر بازی کیلئے نہیں کہتا۔ پی ڈی پی کے نامز د امیدوار نذیر احمد خان کی جانب سے سرینگر ، بڈگام لوک سبھا نشست کیلئے ریٹائرننگ آفیسر کے پاس اپنے کاغذات نامزدگی جمع کرانے کے بعد پارٹی ہیڈ کوارٹر پر منعقدہ انتخابی جلسہ سے خطاب کرتے ہوئے پی ڈی پی سے وابستہ ممبر پارلیمنٹ اور سابق نائب وزیرا علیٰ مظفر حسین بیگ نے کشمیری مزاحمت پسندوں کو سخت الفاظ میں ہدف تنقید بناتے ہوئے کہا کہ حریت لیڈروں نے نوجوانوں کی قبروں پر اپنے لئے بنگلے تعمیر کئے۔ انہوں نے کہاکہ اگر اللہ مجھے حریت لیڈروں جیسی سہولیات اور دولت عطا کرے گا تو میں کم سے کم نوجوانوں کو پتھر بازی کیلئے استعمال نہیں کرو ں گا۔ مظفر بیگ نے الزام لگایا کہ حریت لیڈر اپنے مفادات کیلئے معصوم بچوں اور نوجوانوں کو سنگباری کیلئے اکسانے میں ملوث رہتے ہیں۔ ممبر پارلیمنٹ کا کہنا تھا کہ حریت لیڈروں نے معصوم نوجوانوں کے مزار بنا کر اپنے لئے بنگلے تعمیر کئے۔ انہوں نے کہا کہ بھارت ایک ایسا ملک ہے جو جمہوری ماحول میں ہر ایک کو احترام بخشتا ہے۔ انہوں نے کہاکہ ہر ایک کو خیالات کی جنگ پر یقین محکم ہونا چاہیے اور ہم سب کو اس بات پر یقین ہونا چاہیے کہ پر امن ذرائع سے ہی ہماری مشکلیں آسان اور مصائب دور ہونگے۔ انہوں نے کہا کہ میں ریاستی عوام کو اپنی پارٹی کی جانب سے یقین دلانا چاہتا ہوں کہ ایجنڈا آف الائنس میں جن باتوں پر اتفاق ہوا ہے ، اُن پر ضرور عمل ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ مشکل ترین حالات میں پی ڈی پی نے مفاہمت اور مذاکرات کی جو ت جلائی اور آج بھی امید کی کرن اسی راہ میں نظر آتی ہے۔ مظفر بیگ نے کہا کہ پی ڈی پی کا جنوب ایشیائی خطے میں مذاکرات اور مفاہمت کے عمل کو بحال کرانے میں اہم رول رہا ہے اور یہ اسی محنت اور دور اندیشی کا نتیجہ تھا کہ واجپائی کے دور میں بھارت اور پاکستان کی دوریاں کافی حد تک قربتوں میں تبدیل ہوئیں۔ اس موقعہ پر پی ڈی پی کے نامز د امیدوار نذیر احمد خان نے کہا کہ وہ نوجوانوں کی خواہشات کا احترام کرتے ہیں اور چاہتے ہیں کہ سیاسی محاذ پر نوجوانوں کے جذبات کی ترجمانی کرسکیں۔ نذیر احمد خان نے اپنی تقریر کے دوران نیشنل کانفرنس کو سخت الفاظ میں ہدف تنقید بناتے ہوئے کہا کہ اسی جماعت نے ریاست اور ریاستی عوام کے مفادات کو بار بار زک پہنچایا۔ انہوں نے کہا کہ این سی لیڈروں نے ایک بار نہیں بلکہ بار بار حصول اقتدار کیلئے اپنے اصولوں اور ریاستی مفادات کا سودا کیا۔ انہوں نے کہاکہ وہ پی ڈی پی میں اس لئے شامل ہوئے تاکہ ریاست اور ریاستی عوام کی بہتر طور خدمت انجام دے سکیں۔پی ڈی پی کے سینئر لیڈر عمران رضا انصاری نے کہا کہ انکی پارٹی ایجنڈا آف الائنس کی عمل آوری کیلئے وعدہ بند ہے۔ انہوں نے کہا کہ ریاست میں مذاکرات اور مفاہمت کاعمل شروع کرانے کیلئے ساز گار ماحول کی ضرورت ہے اورپی ڈی پی اسکے لئے کاشاں ہے۔انہوں نے کہا کہ ایجنڈا آف الائنس کی عمل آوری میں سیاسی استحکام کا راز مضمر ہے کیونکہ اس میں ریاستی عوام کی خواہشات ، مطالبات اور مسائل کو پیش نظر رکھا گیا ہے۔ اس موقعہ پر پی ڈی پی ہیڈ کوارٹر میں منعقدہ جلسہ میں پارٹی کے سینئر لیڈر اور پارٹی سے وابستہ سینئر و جونیئر وزرا بشمول سید الطاف بخاری ، نعیم اختر، غلام نبی لون ہانجورہ ، عبدالحق خان ، نظام الدین بٹ ، آسیہ نقاش ، نور محمد شیخ ، محمد خورشید عالم ، سیف الدین بٹ ، ڈاکٹر شفیع اور دیگر کئی لیڈران بھی شامل ہیں۔

تبصرے