بی جے پی کے ریاستی وزیر کا نوجوانوں کیخلاف دیاگیا بیان ناقابل قبول :سرتاج مدنی- کانگریس نے بھی اسکی مذمت کی ، ٹرانسپورٹر، دوافروش، ٹھیکیدار، مٹن ڈیلر اور ٹریول ایجنسیاں سراپا احتجاج

21 اپريل 2017

سرینگر/کے این ایس/حکمران جماعت پی ڈی پی نے ریاستی کابینہ وزیر چندر پرکاش گنگا کے ریمارکس کو قابل مذمت قرار دیتے ہوئے کہا کہ نفرت انگیز گفتگو بلکہ خطرناک ہے ۔پارٹی کے نائب صدر محمد سرتاج مدنی نے کہا کہ حکومت کے سینئر وزیر کی جانب سے کشمیری نوجوانوں کے تئیں دیا گیا تکلیف دہ اور دھمکی آمیز بیان نامناسب ہے ۔ حکمران جماعت پی ڈی پی کے نائب صدر محمد سرتاج مدنی نے ریاستی کابینہ کے وزیر چندر پرکاش گنگا کے بیان کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ اس طرح کی نفرت انگیز گفتگو نہ صرف بلا جواز بلکہ خطرناک بھی ہے ۔ان کا کہناتھا کہ حکومت کے ایک سینئر وزیر کی جانب سے کشمیریوں نوجوانوں کے خلاف دیا گیا بیان نامناسب اور انتہائی تکلیف دہ اور دھمکی آمیز ہے ۔انہوں نے کہا کہ چند ر پرکاش گنگا کا بیان ریاستی کابینہ کے اجلاس جو کہ18اپریل کو جموں میں منعقد ہوا ،کے متصادم ہے کیو نکہ اس اجلاس میں کابینہ نے انسانی جانوں کے اتلاف پر شدید تشویش اور ناراضگی کا اظہار کیا تھا اور سیکورٹی فورسز کو امن وقانون کی صورتحال سے نمٹنے کے دوران صبر و تحمل برتنے کی تلقین کی گئی تھی۔انہوں نے کہا کہ نا راض کشمیری نوجوانوں تک /
پہنچنے کے بجائے عقابی بیان بازی سے وادی حکومت کی جانب سے اٹھائے جارہے امن اقدامات کو دھچکہ لگ سکتا ہے ۔ان کا کہناتھا کہ مرحوم مفتی محمد سعید نے بی جے پی کے ساتھ اس لئے الائنس کی ،تاکہ ریاست کے مختلف خطوں کے عوام کے درمیان خلیج کو ختم کرنے کیلئے پل کی حیثیت سے کام کیا جاسکے ۔اور جموں وکشمیر کو مجموعی ترقی اوقر خوشحالی کے لحاظ سے نئی بلندیوں پر پہنچایا جاسکے۔ انہوں نے کہا کہ لوگوں کو نزدیک لانے کے بجائے اس طرح کے بلاجوازبیانات سے خلیج اور زیادہ پیدا ہوگی ۔محمد سرتاج مدنی نے کہا کہ ایک ذمہ دار حکومت اپنے ہی لوگوں کے خلاف نہیں ہوسکتی ہے ۔ان کا کہناتھا امید ہے کہ بی جے پی لیڈر شپ اس بیان کا سنجیدہ نوٹس لے گی ۔ ادھرریاستی کانگریس نے ریاستی کابینہ وزیر کے بیان کو استحصالی سیاست کو حصہ قرار دیتے ہوئے کہا کہ بی جے پی لیڈر چندر پرکاش گنگا کا بیان حکومتی ذہنیت کی عکاس ہے ۔پارٹی ترجمان نے کہا کہ حکومت وادی کشمیر میں کشیدہ حالات کو معمول پر لانے کے بجائے اور زیادہ آگ لگا رہی ہے ،جو کہ نا قابل برداشت ہے ۔ کانگریس کے ریاستی ترجمان نے بی جے پی لیڈر اور ریاستی کابینہ وزیر چند ر پرکاش گنگا کا وہ بیان جس میں انہوں نے کہا تھا کہ ’احتجاجی مظاہروں سے نمٹنے کیلئے گولی ہی واحد راستہ ‘ کو قابل ِ مذمت قرار دیا ۔کانگریس ترجمان نے کہا کہ یہ اقدام کشمیر میں حالات کو مزید خراب کرنے کے مترادف ہے جبکہ بی جے پی لیڈر اور کابینہ وزیر کا بیان استحصالی سیاست اور حکومتی ذہنیت کی عکاس ہے ۔انہوں نے کہا کہ بی جے پی لیڈر کشمیر میں امن قائم کرنے اور حالات کو معمول پر لانے کے بجائے دھمکی آمیز بیان دے رہے ہیں ۔انہوں نے کہا کہ کابینہ وزیر کی جانب سے دئے گئے بیان سے کشمیر وادی میں حالات اور زیادہ خراب ہوسکتے ہیں ۔کانگریس ترجمان نے بی جے پی کو ہدف تنقید بناتے ہوئے کہا کہ پارٹی کو اس معاملے پر وضاحت کرنی چاہئے جبکہ ریاستی حکومت کی غلط پالیسیوں کے نتیجے میں آج کشمیر جل رہا ہے ۔ان کا کہناتھا کہ ریاستی کابینہ کے بیان سے صاف ظاہر ہوتا ہے کہ پی ڈی پی ،بھاجپا مخلوط حکومت کشمیر کے حوالے سے غیر سنجیدہ ہے اور یہ غلط پالیسیوں کی عکاس ہے ۔انہوں نے کہا کہ بی جے پی مثبت اقدامات اٹھانے کے بجائے لوگوں کو اُکسا رہی ہے اورپارٹی حقیرکامیابیاں حاصل کرنی چاہتی ہیں ۔اس دوران حکمران جماعت بی جے پی کے وزیر چندر پرکاش گنگا کے بیان کو کشمیریوں کے خلاف کھلی دھمکی قرار دیتے ہوئے ٹرانسپوٹروں، ادویات فروشوں، تعمیراتی ٹھیکڈاروں،ٹرانسپوٹروں، ہول سیل مٹن ڈیلروں اور ٹروال ایجنٹوں نے مشترکہ طور پر کہا کہ اس طرح کے جارحانہ بیان بازی کو کسی بھی طور پر قبول نہیں کیا جاسکتا۔ بیان کے مطابق انہوں نے کہا کہ کشمیری عوام کوئی بھیڑ بکری نہیںہے جنہیں وحشیانہ طریقے سے مارا جائے بلکہ ایک ایسی قوم ہے جو کسی بھی طورا س طرح کی کاروائیوں کو قبول نہیں کرئے گی۔گڈس ٹرانسپورٹ ایسو سی ایشن،ہول سیل مٹن ڈیلرس ایسو سی ایشن،سینٹرل کانٹریکٹرس کارڈی نیشن کمیٹی، شکارہ ایسو سی ایشن اور دیگر تجارتی انجمنوں کی میٹنگ کے دوران صنعتی امورات کے وزیر کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ اس طرح کے مشتعل انگیز بیانات سے کوئی بھی چیز حاصل نہیں ہوگی۔سینٹرل کانٹریکٹرس کارڈی نیشن کمیٹی کے جنرل سیکریٹری کی سربراہی میں منعقدہ میٹنگ کے دوران سرکار کو متنبہ کیا کہ اس طرح کے اشتعال انگیز بیانات سے وہ پرہز کرین وگرنہ اس کے سنگین نتائج برآمد ہونگے۔انہوں نے کہا کہ دنیا کا کوئی بھی قانون نہتے اور معصوم احتجاجی مظاہروں پر گولیاں چلانے کی چھوٹ نہیں دیتا۔ پی ڈی پی کو نشانہ بناتے ہوئے کہا گیا کہ یہ جماعت کشمیریوں کی ہمدرد بننے کا دعویٰ کرتی تھی تاہم اس کا چہرہ اب مکمل طور بے نقاب ہوچکا ہے۔انہوں نے کہا کہ یہ جماعت بی جے پی کے سامنے اب سرنگو ہو رہی ہیں اور کشمیریوں کو مارنے کی کھلی آزادی دی جا رہی ہے۔

تبصرے