این سی -کانگریس اتحاد کے بعد پی ڈی پی -بھاجپا اتحاد میدان میں سرینگر اور اننت ناگ پارلیمانی ضمنی انتخابات مشترکہ طور لڑنے کا اعلان

20 مارچ 2017

سرینگر/این سی، کانگریس کے بعد حکومتی اتحاد نے سرینگر اور اننت ناگ پارلیمانی ضمنی انتخابات مشترکہ طور لڑنے کا اعلان کیا۔ اس سلسلے میں بی جے پی نے اننت ناگ میں پی ڈی پی اُمیدوار تصدق مفتی کے حق میں انتخابی مہم شروع کردی۔بھاجپا کا کہنا ہے کہ وہ ضمنی پارلیمانی انتخابات علیحدہ نہیں لڑے گی بلکہ اُنکی پوری حمایت پی ڈی پی امیدوار کو ہوگی۔ بھارتیہ جنتا پارٹی نے اس بات کا واضح اعلان کیا کہ پارٹی ضمنی انتخابات میں علیحدہ طور نہیں کود پڑے گی بلکہ اس کی پوری حمایت پی ڈی پی کو ہوگی ۔ سرینگر اور اسلام آباد نشستوں کیلئے ہونے والے پارلیمانی ضمنی انتخابات کے حوالے سے انتخابی مہم شروع ہوچکی ہے اور سیاسی پارٹیاں ووٹروں کو لبھانے کیلئے میدان میں کود پڑی ہیں ۔ اطلاعات کے مطابق بھارتیہ جنتا پارٹی نے حکومتی اتحادی پارٹی پی ڈی پی کو ان انتخابات میں اپنا تعاون دینے کا اعلان کیا ہے ۔ اس سلسلے میں اتوار کو کھنہ بل اسلام آباد میں ایک روزہ کنونشن منعقد ہوا جس میں بی جے پی کے ایم ایل سی صوفی یوسف نے یہ اعلان کیا کہ ان کی پارٹی ضمنی پارلیمانی انتخابات میں پی ڈی پی کے امیدوار تصدق مفتی کے مد مقابل کوئی امیدوار کھڑانہیں کرنے جارہی ہے ۔ انہوں نے انہوں نے رائے دہندگان اور پارٹی کارکنان پر زور دیتے ہوئے کہا کہ وہ پی ڈی پی کے امیدوار تصدق مفتی کو ضمنی پارلیمانی انتخابات میں کامیاب بنانے کیلئے اپنا تعاون دیں گے ۔دریں اثنائ بھاجپا کے ریاستی سیکریٹری اشوک کول نے/
 کہا کہ ابھی تک انہوں نے اس ضمن میں کوئی فیصلہ نہیں کیا ۔انہوں نے کے این ایس کے ساتھ بات کرتے ہوئے کہا کہ رام مادھو کو ریاستی لیڈرشپ نے آگاہ کیا اور مرکزی لیڈر شپ ہی اس ضمن میں حتمی فیصلہ لے گی ۔ یاد رہے کہ پی ڈی پی نے پارلیمانی ضمنی انتخابات کے حوالے سے اننت ناگ نشست کیلئے سابق وزیر اعلیٰ مرحوم مفتی محمد سعید کے فرزند اور موجودہ وزیر اعلیٰ محبوبہ مفتی کے برادر تصدق مفتی کو اپنا امیدوار نامزد کیا ہے ۔ صوفی یوسف نے کنونشن سے خطاب کرتے ہوئے مزید بتایا کہ جموں میں سنیچر کو قومی جنرل سیکریٹری رام مادھو کی سربراہی میں ایک میٹنگ منعقد ہوئی جس میں یہ فیصلہ لیا گیا کہ بھاجپا پارلیمانی ضمنی انتخابات میں اپنا امیدوار کھڑا نہیں کرے گی بلکہ وہ اپنی پوری حمایت حکومتی اتحادی جماعت پی ڈی پی کو دے گی۔ صوفی یوسف نے دعویٰ کرتے ہوئے کہا کہ وادی کشمیر میں بھاجپا کی بنیادی رکنیت3 لاکھ تجاوز کر چکی ہے اور یہ تمام ووٹ پی ڈی پی کے امیدوار تصدق مفتی کے حق میں جائیں گے۔ یاد رہے کہ اس سے قبل نیشنل کانفرنس اور کانگریس نے پارلیمانی ضمنی انتخابات کے حوالے سے انتخابی گٹھ جوڑ کرکے ڈاکٹر فاروق عبداللہ اور غلام احمد میر کو سرینگر اور اننت ناگ نشستوں کیلئے ہونے والے پارلیمانی ضمنی انتخابات کیلئے بالترتیب اپنے امیدوار نامزد کئے تھے ۔ پی ڈی پی نے سرینگر نشست کیلئے بیروہ سے تعلق رکھنے والے نذیر خان کو اپنا امیدوار نامزد کیا ہے ۔ یہاں یہ بات قابل ذکر ہے کہ پی ڈی پی نے بھی ضمنی پارلیمانی انتخابات کے حوالے سے انتخابی مہم شروع کر دی ہے اور سنیچر کو پارٹی کے امیدوار تصدق مفتی نے اپنے حلقہ انتخاب میں پہلی انتخابی پبلک میٹنگ کی صدارت کی ۔ انہوں نے اپنے پارٹی کارکنان پر واضح کیا تھا کہ وہ نہیں جتائے لیکن اپنی جان پر کھیل کر نہیں ۔

تبصرے