وائرس میں مبتلا مزید 3شہری لقمہ اجل ، مزید 155پازٹیو کیس

جموں وکشمیر میں متوفین کی تعداد بڑھ کر31ہوگئی، کشمیر میں یہ تعداد26تک پہنچ گئی،شفایاب 946، سرینگر10۔اننت ناگ12۔کولگام 6۔کپوارہ 11۔ بارہمولہ 6۔ شوپیان 5۔ گاندربل 2۔ پلوامہ 4۔ جموں ڈویژن 99

کے این ایس : سرینگر/جموں وکشمیر میں جاری لاک ڈاؤن کے باوجود کورونا وائرس انفیکشن کی رفتارتیز رہنے کے بیچ کورونا وائر س میں مبتلاءجنوبی ضلع شوپیان کا 45سالہ شہری،پلوامہ کا70سالہ شہری اور ڈوڈہ ضلع کا72سالہ شہری کی سوموار کو موت ہوگئی ۔ان دونوں اموات کیساتھ جموں وکشمیر میں مرنے والے والے افراد کی تعداد بڑھ کر31ہوگئی ،جن میں27اموات کشمیر میں ہوئیں ۔ پوری دنیا کورونا کے قہر سے پریشان ہے اور ہندوستان بھی لگاتار کورونا انفیکشن کے نئے معاملوں کی وجہ سے بے حال ہوا جا رہا ہے۔ اس وبا کو کم کرنے کے لیے ہندوستان میں لاک ڈاون بھی نافذ کیا گیا تھا اور جموں وکشمیر میں اس لاک ڈاون کے71دن گزر جانے کے بعد بھی اس کی رفتار کم ہونے کی بجائے بڑھتی ہی جا رہی ہے۔ جب کہ جموں وکشمیر میں اموات کا خطر ناک سلسلہ بھی جاری ہے ۔سوموار کو کشمیر اور جموں میں 2انسانی جانوں کا اتلاف ہوا ۔اس سلسلے میں ملنے والی اطلاعات کے مطابق شوپیان ضلع کے رامنگری علاقے کے ایک باشندے کوسکمز میں کئی امراض کے علاج کیلئے31مئی کو اسپتال کے شعبہ ایمر جنسی رات 9بجے داخل کیا گیا تھا۔ میڈیکل سپر انٹنڈنٹ پروفیسر فاروق جان نے بتایا کہ ابتدائی مرحلے پر مریض کی حالت سدھر گئی تھی جس کے بعد کورونا میں مبتلاءہونے کے شبہ کے پیش نظر اسے وارڈ2میں داخل کیا گیا، جہاں اس کے نمونے حاصل کئے گئے۔انہوں نے کہا کہ گذشتہ شب کے دوران مذکورہ مریض کی موت واقع ہوگئی جس کے بعد آج اس کی ٹیسٹ رپورٹ سوموار دوپہر2بجے مثبت آگئی۔ڈاکٹر جان کے مطابق اس دوران جاں بحق شہری کی میت کو لاش گھر کے اندر رکھا گیا تھا۔اسی طرح صوبہ جموں کے ضلع ڈوڈہ ، کا ایک شہری جو جی ایم سی جموں میں زیر علاج تھا، بھی کورونا میں مبتلاءہوکر دم توڑ بیٹھا۔جی ایم سی جموں کے میڈیکل سپر انٹنڈنٹ، ڈاکٹر دارا سنگھ نے مقامی انگریزی خبررساں ادارے جی این ایس کو بتایا کہ ڈوڈہ کے شہری کا کورونا ٹیسٹ گذشتہ روز مثبت آیا تھا اور وہ آج انتقال کرگیا۔ان کا کہناتھا کہ مریض مختلف امراض میں مبتلاءتھا ۔شوپیان،پلوامہ اور ڈوڈہ اضلاع کے3شہریوںکے انتقال سے کورونا سے مرنے والوں کی تعداد31ہوگئی ہے۔معلوم ہوا ہے کہ پلوامہ سے تعلق رکھنے والے ایک70سالہ شہری کی موت ہوگئی ۔ضلع اسپتال پلوامہ کے ڈپٹی میڈیکل اسپر انٹنڈنٹ ،ڈاکٹر میر مشتاق احمد نے بتایا کہ سوموار کی صبح 70ایک شہری کو مردہ حالت میں اسپتال پہنچایا ۔کووڈ ۔19پروٹول کے تحت اسکے نمونے ٹیسٹ کےلئے لئے گئے ،جسکی رپورٹ مثبت آئی ۔نعش کو لاش خانہ میں رکھا گیا اور کووڈ۔19پروٹوکول کے تحت لواحقین کے سپرد کی گئی ۔صوبہ کشمیر میں ہلاکتوں کی تعداد 27اور صوبہ جموں میں ہلاکتوں کی تعداد 4تک پہنچ گئی ۔متوفین میں7کا تعلق سرینگر سے،5کا تعلق بارہمولہ،5کا تعلق اننت ناگ،4کا تعلق کولگام،2کا تعلق شوپیان ،2کا تعلق بڈگام اور ایک کا تعلق ضلع بانڈی پورہ سے ہے جبکہ پلوامہ میں پہلی ہلاکت ہوئی۔باقی ماندہ4 مہلوکین کا تعلق صوبہ جموں سے تھا،جن میں سے ایک کا تعلق ادھمپور سے ہے ۔  ضلع اننت ناگ میں 350 مثبت معاملے سامنے آئے ہیںجن میں 221 سرگرم ہیں۔ 124شفایاب ہوئے ہیں اور05 کی موت واقع ہوئی ہے۔کولگام میں300 مثبت معاملات پائے گئے ہیںجن میں264سرگرم معاملات ہیںاور 32صحتیاب ہوئے ہیںاور04 کی موت واقع ہوئی ہے۔اُدھر سری نگر میں اب تک کورونا وائرس کے 290 معاملات کی تصدیق ہوئی ہے جن میں سے142 سرگرم معاملات ہیں ۔141 مریض صحتیاب ہوئے ہیں جبکہ07 کی موت واقع ہوئی ہے جبکہ کپواڑہ میں 279مثبت معاملات درج کئے گئے ہیں اور 204 سرگرم معاملات ہیں اور75صحتیاب ہوئے ہیں۔ضلع بارہمولہ میں اب تک کورونامریضوں کی تعداد 238ہوئی ہیںجن میں سے 130سرگرم معاملات ہیں اور05مریضوں کی موت واقع ہوئی ہیںاور 103صحتیاب ہوئے ہیں۔بانڈی پورہ میں اب تک 146 مثبت معاملات سامنے آئے ہیں جن میں سے11 سرگرم معاملات ہیں ، 134مریض صحتیاب ہوئے ہیںجبکہ ایک کی موت واقع ہوئی ہے۔اِدھرضلع شوپیان میں 175 مثبت معاملات سامنے آئے ہیںجن میں 64 سرگرم ہیں اور 108صحتیا ب ہوئے ہیںجبکہ 03کی موت واقع ہوئی ہے۔ضلع بڈگام میں کورونا وائرس سے متاثرہ افراد کی کُل تعداد اب تک 110ہوئی ہیںجن میں سے 47سرگرم ہیں اور61اَفراد صحتیاب ہوئے ہیںجبکہ02 کی موت واقع ہوئی ہے ۔گاندربل میں کل 34مثبت معاملات سامنے آئے ہیں جن میں10 سرگرم معاملات ہیں اور 24 اَفراد شفایاب ہوئے ہیں۔پلوامہ ضلع میں کووِڈ ۔19کے 77 معاملات کی تصدیق ہوئی ہے جن میں64 سرگرم معاملات ہیں اور 13  مریض صحتیاب ہوئے ہیں۔ اسی طرح  جموں میں وائر س کے 144مثبت معاملات پائے گئے ہیں جن میں101سرگرم معاملات ہیں اور41 صحت یاب ہوئے ہیںاور02 کی موت واقع ہوئی ہیجبکہ رام بن میں144معاملات سامنے آئے ہیںجن میں 128سرگرم معاملات ہیں اور16 شفایاب ہوئے ہیںجبکہ کٹھوعہ میں78مثبت معاملہ سامنے آئے ہیںجن میں 53 سرگرم معاملات ہیںاور 25اَفراد صحتیاب ہوئے ہیں۔دریں اثنأاودھمپور ضلع میں اب تک کورونا مریضوں کی کُل تعداد 67 ہوئی ہیں جن میں سے 40معاملات سرگرم ہیں۔ 26اَفراد صحتیاب ہوئے ہیں جبکہ ایک کی موت واقع ہوئی ہے۔ ضلع سانبہ میں 44 مثبت معاملے کی تصدیق ہوئی ہے جن میں 31 سرگرم معاملات ہیں اور 13اَفراد شفایاب ہوئے ہیں۔اس طرح پونچھ میں40معاملے سامنے آئے ہیںجو سبھی معاملات سرگرم ہیں ۔راجوری ضلع میں کورونا کے اب تک33 مریض پائے گئے ہیںجن میں 28 معاملے سرگرم ہیں اور 05مریض شفایاب ہوئے ہیں اورریاسی میں بھی14 معاملات سامنے آئے ہیں جن میں11سرگرم ہیں اور03 اَفراد شفایاب ہوئے ہیں۔ کشتواڑ میں12 مثبت معاملے سامنے آئے ہیں جن میں11 معاملے سرگرم ہیں اورایک مریض پوری طرح سے صحتیاب ہوا ہے جبکہ ڈوڈہ میں 26 معاملات سامنے آئے ہیںجن میں سے 24معاملات سرگرم ہیں جبکہ ایک مریض پوری طرح صحتیاب ہوا ہے اور ایک مریض کی موت واقع ہوئی ہے۔

مزید دیکهے

متعلقہ خبریں