سرینگرمیں موسم ِ سرماکی سردترین رات درجہ حرارت منفی2ڈگری تک نیچے چلاگیا گلمرگ میں رات کا درجہ حرارت منفی 6.6ڈگری ریکارڈ کیا گیا کل شام سے کچھ مقامات پربارشوں وبرفباری کاامکان

سرینگر/ کے این این /گزشتہ برس کی طرح ہی امسال بھی ماہ نومبرمیں کشمیروادی میں منگل اوربدھ کی درمیانی رات کادرجہ حرارت معمول سے کافی نیچے ریکارڈ کیاگیا۔خیال رہے سال2017کے ماہ نومبرمیں 23اور24تاریخ کی درمیانی شب کم سے کم درجہ حرارت منفی3.1ڈگری سلیشیس ریکارڈکیا گیاتھاجوکہ 27اور 28 نومبر 2007کی درمیانی رات ریکارڈکردہ درجہ حرارت منفی4.8ڈگری سلیشیس سے کچھ بہترتھا۔تاہم امسال چونکہ ماہ نومبرکے اوائل میں ہی پارہ نقطہ انجمادسے نیچے آگیاہے توماہرین موسمیات کامانناہے کہ خشک موسمی صورتحال رہنے کی صورت میں رواں ماہ کے آخری ہفتے تک سری نگرسمیت وادی کشمیرمیں رات کادرجہ حرارت ریکارڈحدتک گرسکتاہے۔ گزشتہ جمعہ ، سنیچراوراتوارکوکشمیروادی ،خطہ چناب ،خطہ پیرپنچال اورلداخ خطے کے میدانی اوربالائی علاقوں میں بارشوں کیساتھ ساتھ غیرمتوقعہ طورپرہوئی ہلکی ،درمیانہ اوربھاری برفباری کے بعدگرچہ سوموارسے مجموعی طورموسم خشک رہالیکن مطلع صاف رہنے کے باعث رات کے درجہ حرارت میں تنزلی ہوئی ۔سری نگرمیں قائم محکمہ موسمیات کے ترجمان نے بتایاکہ سومواراور/جاری صفحہ نمبر ۱۱پر
منگلوارکی درمیانی رات سری نگرشہرسمیت وادی کے سبھی علاقوں میں درجہ حرارت نقطہ انجمادسے اوپرتھالیکن منگل اوربدھ کی درمیانی رات سری نگر،گلمرگ اورپہلگام سمیت وادی میں شمال وجنوب پارہ کافی نیچے آیا،اورپوری وادی میں گزشتہ رات درجہ حرارت نقطہ انجمادسے نیچے رہا۔انہوں نے کہاکہ شہرسری نگرمیں گزشتہ شب رواں موسم ِ سرماکی سردترین رات رہی کیونکہ درجہ حرارت منفی2.2ڈگری سیلشیس ریکارڈکیاگیا۔انہوں نے کہاکہ موسمی صورتحال خشک رہنے اوررات کے وقت مطلع صاف رہنے کی صورت میں شبانہ سردی میں مزیداضافہ ہوسکتاہے ۔محکمہ موسمیات کے ترجمان نے بتایاکہ شمال وجنوب پوری کشمیروادی میں منگل اوربدھ کی رمیانی رات درجہ حرارت منفی رہا۔انہوں نے بتایاکہ سیاحتی مقام گلمرگ میں حال ہی میں ہوئی برفباری کے بعدبرف جم جانے کے نتیجے میں پارہ نقطہ انجمادسے تیزی کیساتھ نیچے آیاہے ،اوریہاں گزشتہ رات درجہ حرارت منفی 6.6ڈگری سیلشیس ریکارڈ کیاگیا۔ترجمان کے مطابق ایک اورسیاحتی مقام پہلگام میں منگل اوربدھ کی درمیانی رات درجہ حرارت منفی5.2ڈگری سیلشیس درج کیاگیا۔انہوں نے کہاکہ سری نگرشہر،گلمرگ اورپہلگام میں گزشتہ رات رہادرجہ حرارت معمول سے کافی کم تھا۔محکمہ موسمیات کے ترجمان نے کہاکہ پوری وادی شدیدسردی کی لپیٹ میں آئی ہے کیونکہ شمال وجناب بیشترمیدانی اوراوپری علاقوں میں منگل اوربدھ کی درمیانی رات درجہ حرارت نقطہ انجمادسے نیچے ریکارڈکیاگیا۔انہوں نے کہاکہ کوکرناگ میں رات کاکم سے کم درجہ حرارت منفی1.7اورنزدیکی علاقہ قاضی گنڈمیں شبانہ درجہ حرارت منفی2.8ڈگری سیلشیس ریکارڈکیاگیا۔محکمہ موسمیات کے ترجمان نے بتایاکہ جنوبی کشمیرکے بیشترعلاقوں میں دوران شب درجہ حرارت کی کچھ ایسی ہی صورتحال رہی کیونکہ بیشترمقامات پررات کے وقت درجہ حرارت نقطہ انجمادسے نیچے ریکارڈکیاگیا۔انہوں نے کہاکہ وسطی کشمیرمیں سری نگرکے ساتھ ساتھ ضلع بڈگام اورگاندربل ضلع کے بیشترعلاقوں میں رات کے وقت ٹھٹھرتی سردی رہنے کے باعث لوگوں کوسخت مشکلات کاسامناکرناپڑا۔محکمہ موسمیات کے ترجمان نے مزیدکہاکہ شمالی کشمیرکے تینوں اضلاع بارہمولہ ،کپوارہ اوربانڈی پورہ میں بھی درجہ حرارت تیزی کیساتھ تنزلی کاشکارہے ۔انہوں نے بتایاکہ کپوارہ میں رات کادرجہ حرارت منفی1.8ڈگی سیلشیس درج کیاگیاجبکہ بارہمولہ اوربانڈی پورہ میں بھی منگل اوربدھ کی درمیانی رات پارہ نقطہ انجمادسے نیچے ریکارڈکیاگیا۔لداخ خطے میں حالیہ برفباری کے بعددرجہ حرارت میں تنزلی آنے کاذکرکرتے ہوئے محکمہ موسمیات کے ترجمان نے بتایاکہ لیہہ میں منگل اوربدھ کی درمیانی رات درجہ حرارت منفی8.4اورکرگل میں شبانہ درجہ حرارت منفی9ڈگری سیلشیس ریکارڈکیاگیا۔خیال رہے سال2017کے ماہ نومبرمیں 23اور24تاریخ کی درمیانی شب کم سے کم درجہ حرارت منفی3.1ڈگری سلیشیس ریکارڈکیاگیاتھاجوکہ 27اور28نومبر2007کی درمیانی رات ریکارڈکردہ درجہ حرارت منفی4.8ڈگری سلیشیس سے کچھ بہترتھا۔تاہم امسال چونکہ ماہ نومبرکے اوائل میں ہی پارہ نقطہ انجمادسے نیچے آگیاہے توماہرین موسمیات کامانناہے کہ خشک موسمی صورتحال رہنے کی صورت میں رواں ماہ کے آخری ہفتے تک سری نگرسمیت وادی کشمیرمیں رات کادرجہ حرارت ریکارڈحدتک گرسکتاہے۔محکمہ موسمیات کے ترجمان نے بتایاکہ 8نومبرکی شام تک ریاست میں مجموعی طورپرموسم خشک رہے گاتاہم انہوں نے کہاکہ 9نومبربروزجمعتہ المبار ک کی شام سے کچھ مخصوص مقامات پربارشوں کیساتھ ساتھ ہلکی برفباری ہوسکتی ہے ۔انہوں نے پھرکہاکہ اگرخشک موسمی صورتحال کاسلسلہ طول پکڑجاتاہے توکشمیروادی کیساتھ ساتھ لداخ ،خطہ پیرپنچال اورخطہ چناب کے تحت آنے والے علاقوں میں سردی کی شدت مزیدبڑھ سکتی ہے۔

مزید دیکهے

متعلقہ خبریں