جزیرہ نما سینا میں 11مشتبہ جنگجوہلاک:مصر کا دعوی

قاہرہ ﴿رائٹر﴾مصر کے سلامتی دستوں نے شمالی سینا کے قصبہ العریش میں ہوئے ایک تصادم میں 11مشتبہ جنگجوؤں کو ہلاک کردیا۔سرکاری خبر رساں ایجنسی مینا نے یہ اطلاع دی ہے ۔رپورٹ میں کہاگیاہے کہ تصادم اس وقت شروع ہوا جب سلامتی دستوں نے ایک ویران پڑے پٹرول اسٹیشن پر جنگجوؤں کے ایک گروپ کو حراست میں لینے کی کوشش کی جو کہ دہشت گردانہ کارروائی کا منصوبہ بنارہے تھے ۔رپورٹ میں کہاگیاہے کہ ہلاک شدگان میں دوانتہائی خطرناک دہشت گرد شامل ہیں جن کے نام محمد ابراہیم جبر شاہین اور جے مرشد ہیں ۔اس نے کہاکہ پولیس نے تصادم کے دوران بدوقیں اور کارٹرج ضبط کئے ہیں ۔ایجنسی نے یہ نہیں بتایاکہ یہ تصادم کب ہوا اور نہ ہی مشتبہ افراد کی دیگر تفصلات بتائیں ۔اس نے سکیورٹی فورسز کے کسی جانی نقصان کے بارے میں بھی نہیں بتایا۔سلامتی دستوں نے رائٹر کو بتایاکہ الگ واقعہ میں اتوار کو سرحدی قصبہ شیخ زوید میں ایک بکتر بند گاڑی میں دھماکہ ہونے سے دوسکیورٹی جوان ہلاک اور چار زخمی ہوگئے تھے ۔مصر کے فوجی جوان وہاں کی پولیس کی مددسے فروری سے جنگجوؤں کے خلاف بڑی مہم چلارہے ہیں ۔مصر کی فوج نے 2013میں جب سے اخوان المسلمین کے رہنما صدر محمد مرسی کو اقتدارسے بے دخل کیاہے اس کے بعد سے مصر جزیرہ نما سینا میں داعش کی شورش پسندی کا مقابلہ کررہاہے۔

مزید دیکهے

متعلقہ خبریں