اترپردیش کے دیوی مندر میں انسانی قربانی سے سنسنی

بارہ بنکی﴿یو این آئی﴾ اترپریش کے ضلع بارہ بنکی میں پیر کو توہم پرستی کا انتہا ئی نمونہ دیکھنے کو ملا جب دریاباد علاقے میں ایک نوجوان نے ایک مندر میں اپنا سر کاٹ کر دیوی کو چڑھا دیا۔پولیس سپرنٹنڈنٹ وی پی سریواستو کے مطابق کوٹوا گاؤں کے رہنے والے اٹھارہ سالہ انرودھ یادوگاؤں کے پاس ایک دیوی مندر میں تقریبا چار بجے پوجا کرنے گیا تھا اور وہیں اس نے بانکے سے حملہ کر کے اپنی گردن کاٹ کر دیوی کو چڑھا دیا۔انہوں نے بتایا کہ گردن کٹتے ہی چیخ پکار سن کر لوگوں نے جب تک اس کو باہر نکالا تب تک اس کی موت ہو چکی تھی۔ پولیس لاش کی پوسٹ مارٹم کرانے کی بات کر ہی ہے جبکہ مقامی افراد پوسٹ مارٹم کے لئے تیار نہیں ہیں۔مقامی لوگوں کے مطابق انرودھ یادو ایک سال سے دیوی مندر میں پوجا کرنے آرہا تھا۔ اس نے ایک سال تک اناج نہ کھاکر دیوی کی عبادت کی تھی اور اس کے بعد اس نے گاؤں میں بھنڈارا بھی کرایا تھا۔آج معمول کے مطابق وہ مندر گیا اور وہیں پر اس نے دھاردار ہتھیار سے اپنی گردن کاٹ دی۔

مزید دیکهے

متعلقہ خبریں