مواصلات، آئی ٹی کے شعبہ میں 20ارب ڈالر سے زائد کی ایف ڈی آئی :ایسوچیم

نئی دہلی﴿یو این آئی﴾ مواصلات ، اطلاعاتی تکنالوجی اور مالی خدمات نے غیرملکی سرمایہ کاروں کو سب سے زیادہ اپنی طرف راغب کیا ہے ، جس کی وجہ سے 2017-18میں 20ارب ڈالر سے زائد راست غیرملکی سرمایہ کاری ﴿ایف ڈی آئی﴾ ان ہی شعبوں میں ہوئی ہے ۔صنعتی تنظیم ایسوچیم نے ریزرو بینک کے اعداد و شمار کا حوالہ دیتے ہوئے آج کہا کہ آن لائن بازار میں بڑھتے مقابلے اور گلوبل پرائیویٹ ایکویٹی اینڈ وینچر فنڈ کی وجہ سے غیرملکی سرمایہ کاروں کے لئے مواصلات خدمات ، خردہ ا ور تھوک کاروبار، مالیاتی اور کمپیوٹر خدمات سرمایہ کاری کے لحاظ سے توجہ کھینچنے والے شعبے ہیں۔مالی برس 2016-17میں مواصلات خدمات کے شعبہ میں 5.87ارب ڈالر کی سرمایہ کاری ہوئی تھی جبکہ 2017-18میں یہ اعداد و شمار بڑھ کر 8.80ارب ڈالر ہوگئے ۔ اس دوران خردہ اور تھوک کاروبار میں ایف ڈی آئی 2.77ارب ڈالر سے بڑھ کر 4.47ارب ڈالر ہوگئی۔ مالیاتی خدمات کے شعبہ میں ایف ڈی آئی 3.73ارب ڈالر سے بڑھ کر 4.07ارب ڈالر اور کمپیوٹر سروس کے شعبہ میں 1.93ارب ڈالر سے بڑھ کر 3.17ارب ڈالر ہوگئی۔ایسوچیم کا کہنا ہے کہ مالی برس 2017-18میں آئی 37.36ارب ڈالر کی مجموعی ایف ڈی آئی کا پچاس فیصد سے زائد حصہ کی ان شعبوں میں سرمایہ کاری ہوئی جس سے پتہ چلتا ہے کہ معیشت کے نئے شعبوں میں سرمایہ کاروں کا رجحان کس قدر ہے ۔رے ئل اسٹیٹ کے شعبہ میں ترقی کی رفتار سست رہنے کے باوجود اس شعبہ میں ایف ڈی آئی بہتر ہوئی ہے ۔ اس شعبہ میں سرمایہ کاری تقریباََ چار گنا سے بڑھ کر 10.5کروڑ دالر سے 40.5کروڑ ڈالر ہوگئی ہے ۔ غیرملکی سرمایہ کاروں کی دلچسپی اس کے علاوہ عام کاروبار خدمات اور بجلی کی تقسیم اور ٹرانسمیشن میں بڑھی ہے ۔ان شعبوں میں سرمایہ کاری بالترتیب 2.68ارب ڈالر سے بڑھ کر تین ارب ڈالر اور 1.72 ارب ڈالر سے برھ کر 1.81ارب ڈالر ہوگئی ہے ۔

مزید دیکهے

متعلقہ خبریں