جیلوں میں قیدیوں کی ابتر حالت پر سید علی گیلانی کااظہار برہمی عالمی اداروں سے ریاست کی موجودہ صورتحال کا نوٹس لینے کا مطالبہ

سرینگر/حریت گ چیرمین سید علی گیلانی نے قیدیوں کے انسانی حقوق کی بدترین پامالیوں پر اپنی گہری تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ ریاست جموں کشمیر کے حریت پسند قیدیوں کا قصور صرف یہ ہے کہ وہ حقِ خودارادیت جیسے جمہوری اور سیاسی مطالبے کی پاداش میں بھارت کی انتظامیہ اور افواج سمیت مختلف ایجنسیوں کے ہاتھوں ذلت آمیز سلوک کا شکار بنائے جارہے ہیں۔ حریت راہنما نے اس امر پر افسوس کا اظہار کیا کہ دہلی کے بدنامِ زمانہ تہاڑ جیل سے لے کر ریاست جموں کشمیر کے سبھی جیل خانوں میں تمام سیاسی قیدیوں کے ساتھ امتیازی سلوک روا رکھتے ہوئے انہیں جرائم پیشہ قیدیوں سے بھی بدتر سلوک کا حقدار قرار دیا جارہا ہے۔ حریت راہنما نے جیل حکام کی طرف سے جموں کشمیر کے سیاسی قیدیوں کو بنیادی سہولیات سے محروم رکھے جانے کی مجرمانہ کارروائی کی شدید ترین الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے کہا کہ ہمارے سبھی حریت پسند محبوسین ضمیر کے قیدی ہیں۔ یہ اپنے خاندان اور علاقوں کے معززین میں شمار کئے جاتے ہیں۔ حریت راہنما نے مزاحمتی تحریک سے/جاری صفحہ ۱۱ پر

مزید دیکهے

متعلقہ خبریں