’’باغی ممبران کی گھر واپسی کیلئے پی ڈی پی ہائی کمان متحرک‘‘جاوید بیگ کیساتھ پہلا رابطہ
ڈمیج کنٹرول مہم میں چوٹی کے لیڈران مصروف،انصاری برادران کی واپسی کیلئے کوششیں تیز

سرینگر/ الفا نیوز سروس/ پی ڈی پی میںمزید بغاوت روکنے کیلئے اعلیٰ قیادت نے درپردہ باغی ممبران سے رابط قائم کرلیا ہے اور انہیں منانے کیلئے عملی طور پر کوششوں کا آغاز ہوگیا ہے جس کے دوران چوٹی کے لیڈران نے جاوید بیگ سے ملاقات کی ہے جبکہ دیگر باغی لیڈران کی پارٹی سربراہ کیساتھ ملاقات کیلئے راہ ہموار کی جارہی ہے ۔ پی ڈی پی پارٹی میN بغاوت کو روکنے کیلئے ڈمیج کنٹرول مہم شروع کر دی گئی ہے جس کے تحت ذرائع کے مطابق چوٹی کے لیڈران نے باغی لیڈران کومنانے کی کوششیں شروع کر دی ہیں ۔ایک موقر قومی اخبار نے پی ڈی پی کے اندرونی ذرائع کا حوالہ دیتے ہوئے کہاہے کہ محبوبہ مفتی کی دلی سے سرینگر واپسی کے فورا بعد پارٹی کو مزید ٹوٹ پھو ٹ سے بچانے پر اتفاق ہوگیا ہے اور ایسے میں پارٹی سربراہ کیساتھ اکیس سے زیادہ ممبران /جاری صفحہ نمبر ۱۱پر
نے جو ملاقات کی ہے اس میں پارٹی کے اندر انتشار کو مزید نہ پھیلنے دینے کی بات کی گئی ہے اور ذرائع کا کہنا ہے کہ پارٹی کے چوٹی کے لیڈران کے ایک گروپ کو یہ کام سونپا گیا ہے کہ وہ ناراض ممبران اسمبلی کیساتھ رابط کریں اور ان کی شکایات کو سنیں تاکہ ان کی گھر واپسی کو یقینی بنایا جا سکے ۔ ذرائع کامزید کہنا ہے کہ اعلیٰ پارٹی لیڈر شپ اس کام میں جڑ گئی ہے جو نقصان بغاوت کی وجہ سے ہوا ہے اس کو لیکر ڈمیج کنٹرول کے تحت کام کی جائے تاکہ مزید کوئی بھی ممبران باہر کا راستہ اختیار نہ کرے اور وہ ان لوگوں کیساتھ مل نہ سکے ،وہیں ذرائع کے مطابق سوموار کو ہی کچھ ایک ممبران کیساتھ ان لیڈران نے رابطہ قائم کرلیا گیا لیکن ان میں سے کچھ ایک پارٹی کے سینئر لیڈر اور سابق وزیرخزانہ کی والدہ کی وفات کے سلسلے میں لڈروہ گئے ہوئے تھے اور ان کی پارٹی سربراہ کیساتھ ملاقات نہیں ہوسکی ہے ،اس کے علاوہ جو میٹنگ منعقد ہوئی تھی اس میںبھی کچھ اعلیٰ لیڈران نہیں تھے ۔ چنانچہ ایسے میں عمرا ن رضا انصاری اور ان کے چاچا عابد رضا انصاری کی گھر واپسی کیلئے سنجیدہ کوششیں شروع کر دی گئی ہیں کیونکہ کچھ ایک لیڈران کے مطابق ان کی شکایات اور ان کیساتھ ہوئی زیادتیوں کا معاملہ پارٹی سربراہ کیساتھ میٹنگ میںاٹھایا گیا ہے اور اس پر سنجیدگی سے غور کیا گیا ہے جس کے بعد پارٹی سربراہ کا کہنا تھا کہ اگر کسی بھی ممبر کیساتھ کوئی زیادتی ہوئی اور ان کی کچھ ایک شکایات ہیں تو گھر کے اندرہی مسائل کو سلجھایاجا سکتاہے لہذا اس میںگھر کی بات کو چوراہے پر ڈال کر کسی کو کچھ حاصل نہیں ہوگا ۔

مزید دیکهے

متعلقہ خبریں