بین ذات شادی معاملہ:سپریم کورٹ میں فیصلہ محفوظ

نئی دہلی/ 7مارچ ﴿یو این آئی﴾ سپریم کورٹ نے بین ذات شادیوں میں کھاپ پنچایتوں کی مداخلت اور عزت کے خاطر قتل یعنی آنر کلنگ کے واقعات پر پابندی لگانے سے متعلق عرضی پر آج فیصلہ محفوظ رکھ لیا۔ چیف جسٹس دیپک مشرا ، جسٹس اے ایم کھانولکر اور جسٹس ڈی وی چندر چوڑ کی بنچ نے عرضی گذار شکتی واہنی اور دیگر فریقین کے دلائن سننے کے بعد فیصلہ محفوظ رکھ لیا۔ عدالت نے کہا کہ وہ اپنے فیصلے میں ذات، گوتر یا دیہی پنچایتوں کو کھاپ کی شکل میں ذکر نہیں کرے گی ۔ عدالت نے کہا کہ جب دو بالغ اپنی مرضی سے شادی کرتے ہیں تو نہ تو رشتہ دار اور نہ ہی کوئی پنچایت اس کی مخالفت کرسکتی ہے ۔

مزید دیکهے

متعلقہ خبریں