شہری ہلاکتوں کیخلاف دائر عرضی کی سماعت انسانی حقوق کمیشن کی طرف سے ڈی سی اور ایس ایس پی کو نوٹس

سرینگر/کے این ایس /’’شہری ہلاکتوں کیخلاف دائرعرضی کی سماعت ‘‘کے دوران ریاستی حقوق البشرکمیشن نے’’ ڈی سی اورایس ایس پی شوپیان سے حالیہ اموات کی رپورٹ طلب‘‘ کی جبکہ کمیشن ھٰذانے چیف سیکرٹری اورڈی جی پی سے اسبات کاجواب طلب کیاکہ آیافوج اورفورسزکی جانب سے معیاری ضابطہ اخلاق یعنیSOPعمل کیاجاتاہے کہ نہیں ۔ بدھ کے روزریاستی حقوق انسانی کمیشن نے مقامی حقوق انسانی کارکن محمداحسن اونتوکی جانب سے 6مارچ کویہاں دائرکی گئی ایک عرضی یاپیٹشن کوزیرسماعت لایا۔انٹرنیشنل فورم فارجسٹس کے چیئرمین محمداحسن اونتونے بتایاکہ شوپیاں میں حال ہی میں چارمعصوم شہریوں کی ہلاکت اورسیکورٹی ایجنسیوں کی جانب سے معیاری عملیاتی طریقہ کاریعنیSOPکی پابندی نہ کئے جانے کیخلاف انہوں نے 5مارچ کومقامی حقوق انسانی کمیشن میں ایک عرضی جمع کرائی تھی ،جسکوکمیشن نے زیرفائل نمبرSHRC/81/sgr/2018 سماعت کیلئے منظورکیا۔انہوں نے کہاکہ چیئرمین کمیشن ریٹائرڈجسٹس بلال نازکی کی عدم موجودگی کے باعث کمیشن کے ایک سینئرممبرعبدالحمید وانی نے دائرعرضی کوبدھ کے روززیرسماعت لایا۔محمداحسن اونتوکے مطابق اُنہوں نے دائرعرضی میں کمیشن ھٰذاسے استدعاکی ہے کہ ڈپٹی کمیشنراورایس ایس پی شوپیان سے پہنوشوپیان میں 4مارچ کی شام کوفورسزکے ہاتھوں 4معصوم شہریوں کی ہلاکت کے بارے میں رپورٹ طلب کی جائے اورریاستی چیف سیکرٹری وپولیس کے سربراہ سے اسبات کاجواب طلب کیاجائے کہ آیافوج اورفورسزکی جانب سے معیاری عملیاتی طریقہ کارعینی SOPپرعمل درآمدکیاجاتاہے کہ نہیں ۔انٹرنیشنل فورم فارجسٹس /جاری صفحہ نمبر۱۱پر
اینڈہیومن رائٹس کے چیئرمین نے بتایاکہ اُنکی دائرکردہ عرضی کوزیرسماعت لانے کے دوران کمیشن کے ممبرعبدالحمید وانی نے ڈی سی اورایس ایس پی شوپیان کے نام نوٹس اجرائ کرتے ہوئے اُن سے 4مارچ کوپہنوشوپیان میں چارشہریوں کی ہلاکت کے بارے میں فوری رپورٹ طلب کی جبکہ محمداحسن اونتوکے مطابق اُنکی دائرکردہ عرضی کے دوسرے اہم نکتے کوبھی کمیشن نے سنجیدگی سے لیا،اوراس سلسلے میں ریاستی چیف سیکرٹری اورڈی جی پی کے نام الگ الگ نوٹسیں اجرائ کرتے ہوئے سیول انتظامیہ اورپولیس محکمہ کے سربراہان سے اسبات کاجواب طلب کیاکہ آیافوج اورفورسزکی جانب سے معیاری ضابطہ اخلاق یعنیSOPعمل کیاجاتاہے کہ نہیں۔انہوں نے مزیدکہاکہ اسٹیٹ ہیومن رائٹس کمیشن نے شہری ہلاکتوں اورمعیاری ضابطہ اخلاق کے حوالے سے دائرعرضی کی اگلی سماعت کیلئے 2اپریل2018کی تاریخ مقرر کردی۔

مزید دیکهے

متعلقہ خبریں