جمعیت اہلحد یث سراپا رنج و الم

سرینگر/شو پیان پھر خو ن میں نہلا یا گیا، اور قہر واستبداد کے سارے ہتھکنڈ ے آ زما کر قبرستا ن کی خا مو شی طاری کرنے کے منصوبے پر عمل پیرا ئی کا سلسلہ تسلسل کے ساتھ جاری ہے اور اس پر اقوا م عالم کی خا مو شی نت نئے سوالات کو جنم دے رہی ہے ان باتو ں کا اظہار جمعیت اہلحدیث نے اپنے ایک بیا ن میں کرتے ہو ئے کہا ہے کہ شوپیان میں کئی نو جوا نوں کو راست انداز میں فورسز نے گو لیو ں کا نشا نہ بنا تے ہو ئے انہیں ابدی نیند سلا کر ہر چہار سو محشر کا سماں بپا کر دیا ہے اور پھر اس جور و ظلم پر احتجا ج کرنے والو ںکو بھی مشق ستم بنا نے میںبھی کو ئی ہچکچا ہٹ محسو س نہیں کی گئی اور کتنے ہی لو گ زخموں سے نڈھا ل ہیں وادی کے کئی دیگر علاقوں میں بھی ان جگر خراش واقعات پر اپنا احتجاج درج کرانے وا لو ں پر بھی شیلنگ کر کے فریاد کی ہر آواز کو دبانے کی کاوشیں کی جارہی ہیںجمعیت نے ان واقعا ت پر شدید بر ہمی اور تشویش کا اظہار کرتے ہو ئے کہا ہے کہ اقوام متحدہ اور دوسرے عا لمی معتبر ادرے اس قہرو ستم کا سنجیدہ نو ٹس لیں اور مسئلہ کشمیر کے پائیدار حل کے لئے سود مند کو ششیں کریں۔
 تا کہ اس خطے میں دیر پا امن قا ئم ہو سکے

مزید دیکهے

متعلقہ خبریں