ستورہ ترال اور ہندوارہ میں کریک ڈائون گھرگھر تلاشیاں، شناختی کارڈ بھی چیک کئے گئے

سرینگر/نیازحسین/طارق راتھر/کے این ایس/ ترال کے مضافاتی علاقہ ستورہ کاکریک ڈائون کرکے فوج اورفورسزنے گھرگھرتلاشی کارروائی عمل میں لائی ۔ جنوبی کشمیرمیں آپریشن آل آئوٹ کے تحت فوج ،فورسزاورٹاسک فورس اہلکاروں نے منگل کی صبح حساس علاقہ ترال کے ستورہ گائوں کومحاصرے میں لیکر جنگجو مخالف آپریشن شروع کیا۔معلوم ہواکہ 42آرآر،سی آرپی ایف کی180ویں بٹالین اورریاستی پولیس کے/جاری صفحہ نمبر۱۱پر
 اسپیشل آپریشن گروپ کے اہلکاروں نے منگل کی صبح ستورہ ترال کواس بنائ پرمحاصرے میں لیکرتلاشی کارروائی شروع کی کیونکہ سیکورٹی ایجنسیوں کویہاں کچھ جنگجوئوں کے موجودیاچھپے ہونے کی اطلاع ملی تھی ۔پولیس ذرائع نے بتایاکہ جنگجوئوںکی موجودگی سے متعلق اطلاع کی بنیادپریہاں کریک ڈائون کیاگیا۔مقامی لوگوں نے بتایاکہ منگل کوعلی الصبح فوج اورفورسزنے پورے گائوں کوچاروں اطراف سے سیل کررکھاتھاجسکے بعدیہاں تلاشی کارروائی عمل میں لائی گئی ۔لوگوں کے بقول گھرگھرتلاشی کارروائی کیساتھ ساتھ مکینوں اورکچھ مہمانوں سے پوچھ تاچھ کی گئی ۔تاہم یہ تسلی ہوجانے کے بعدیہاں کوئی جنگجوموجودنہیں کریک ڈائون ختم کیاگیاتاہم یہ پوراگائوں کئی گھنٹوں تک سیل رہا۔ادھرکرگامہ چھوٹی پورہ ہندوارہ علاقہ میں فوج اور ایس او جی نے کریک ڈائون کر کے گھر گھر تلاشی کاروائی کی جبکہ آس پاس کے دیگر علاقوں کو بھی محاصرہ میں رکھا گیا۔ منگلوار کی صبح کو فوج اور سپیشل آپریشن گروپ ﴿ایس او جی﴾کو ایک خفیہ اطلاع ملی کہ کرگامہ چھوٹی پورہ میں جنگجو موجود ہیں جس کے بعد مذکورہ علاقہ کا کریک ڈائون کیا گیاجبکہ لوگو ں کے شناختی کارڈ بھی چیک کئے گئے۔منگل کی شام دیرگئے تک فوج کی کارروائی پر امن طور اختتام کو پہنچی۔مقامی لوگوں کا کہنا ہے کہ گھر گھر تلاشی لی گئی۔

مزید دیکهے

متعلقہ خبریں