کانگو میں نسلی تشدد، 49افراد ہلاک

گوما / ڈیموکریٹک جمہوریہ کانگو 3مارچ ﴿یو این آئی﴾ وسطی افریقی ملک کانگو جمہوریہ کے صوبہ ایتري میں ہیما چرواہے اور لینڈو قبائل کے کسانوں کے درمیان نسلی تشدد میں کم از کم 49لوگوں کی موت ہو گئی۔ آج مقامی حکام نے اس قتل عام کے بار ے میں معلومات دی۔ اس ماہ میں نسلی تشدد کایہ دوسرا واقعہ ہے ۔ 1998-2003کی جنگ کے بعد سے دونوں گروپوں کے درمیان کشیدگی کافی کم ہو گئی تھی، لیکن حالیہ کچھ مھینوں میں زمین کو لے کر جاری تنازعہ کی وجہ سے دونوں گروپوں کے درمیان کشیدگی کافی بڑھ گئی ہے ۔ فروری میں مسلح ہیما اور لینڈو قبائل کے درمیان تشدد میں کم از کم 30لوگوں کی موت ہوئی ہے ۔قابل غور ہے کہ یوگنڈا اور روانڈا سے متصل مشرقی کانگو کے سرحدی علاقوں میں گزشتہ ایک سال کے دوران باغیانہ سرگرمیوں میں کافی اضافہ ہوا ہے ۔ صدر جوزف کابیلہ نے دسمبر 2016میں اپنی میعاد پوری ہونے کے بعد عہدہ سے ہٹنے سے انکار کر دیا تھا۔

مزید دیکهے

متعلقہ خبریں