ٹنل کے آر پار برف باری اور بارشیں

سرینگر -جموں شاہراہ وقفے وقفے سے آمدورفت کیلئے بند ،سونہ مرگ - لیہہ ، بانڈی پورہ- گریز اور مغل روڈ پر بھاری بارف باری - گلمرگ میں برف باری سے سیاح لطف اندوزہوئے،کل صبح سے موسم میں تبدیلی کی پیشن گوئی
سرینگر/یو این آئی /کے این ایس /’’جواہرٹنل کے آرپارشبانہ برف باری اورمتواتربارشیں‘‘ہونے کے باعث سری نگرجموںشاہراہ کوپھرایک مرتبہ بندکردیاگیاجسکے نتیجے میں سینکڑوں مسافراورمال بردارگاڑیاں مختلف مقامات پردرماندہ پڑی ہیں ۔ اس دوران سدھناٹاپ،فرکیاں اورزیڈگلی پرتازہ برف باری ہونے کے بعدکپوارہ کرناہ شاہراہ کوبھی بندکردیاگیا۔خیال رہے موسم سرماکی پہلی برف باری ہونے کے بعدسرینگرلیہہ شاہراہ ،گریزبانڈی پورہ شاپراہ اورمغل روڑماہ دسمبر2017سے بندپڑے ہیں ۔ادھرتازہ بارشیں ہونے کے بعدسری نگرسمیت وادی کے سبھی ضلعی وتحاصیل صدرمقامات کی سڑکوں ،گلیوں اوربازاروں میں پانی جمع ہوجانے کے باعث لوگوں کوعبورومرورمیں سخت مشکلات کاسامناکرناپڑا۔اس دوران محکمہ موسمیات نے جموں ،کشمیراورلداخ کے میدانی وبالائی علاقوں میں متواتربارش اورہلکی تادرمیانہ درجے کی برف باری ہونے کی تصدیق کرتے ہوئے یہ امکان ظاہرکیاکہ سنیچر کی صبح سے موسمی صورتحال پھرمعمول پرآجائیگی ۔ موسمیاتی ماہرین کی پیشگوئی کے عین مطابق جمعہ کی شام سے کشمیروادی ،خطہ چناب ،خطہ پیرپنچال ،جموں اورلداخ خطے میں موسمی صورتحال نے کروٹ لی ،اورمیدانی علاقوں میں بارشوں کاسلسلہ ہونے کیساتھ ہی بالائی علاقوں میں تازہ برف باری ہوئی ۔سرینگرمیں قائم محکمہ موسمیات کے ترجمان نے بتایاکہ وادی سمیت ریاست کے بیشترعلاقوں میں جمعہ کی شام سے بارشیں اوربرف باری شروع ہوئی جورات بھرجاری رہی ۔ترجمان کے مطابق شہرسری نگرسمیت پوری وادی میں رات بھربارشوں کاسلسلہ جاری رہاجبکہ بالائی علاقوں میں تازہ برف باری ہوتی رہی ۔محکمہ موسمیات کے ترجمان کاکہناتھاکہ جواہرٹنل کے آرپارزیادہ/جاری صفحہ نمبر ۱۱پر
 ترعلاقوں میں متواتربارشیں ہوتی رہیں ۔ٹنل کے آرپارتازہ بارشوں کے بعدسری نگرجموں شاہراہ کوٹریفک کی آمدورفت کیلئے بندکیاگیا۔ٹریفک پولیس کے ذرائع نے اسکی تصدیق کرتے ہوئے بتایاکہ رات بھربارشوں کاسلسلہ جاری رہنے کے بعدرام بن ،ڈگڈول اوردیگرکچھ مقامات پرنزدیکی پہاڑیوں سے چٹانیں اورمٹی کے تودے گرآنے کاسلسلہ شروع ہوگیا۔انہوں نے کہاکہ کچھ مقامات پرزمین کھسک جانے کے واقعات بھی پیش آئے ۔ذرائع کاکہناتھاکہ تازہ بارشوں کے نتیجے میں پسیاں ،مٹی کے تودے اورچٹانیں گرآنے کے بعدسری نگرجموں شاہراہ کوگاڑیوں کی آمدورفت کیلئے بندکردیاگیاکیونکہ ایسی صورتحال میں مسافروں اورگاڑیوں کونقصان پہنچنے کااحتمال تھا۔ذرائع نے بتایاکہ چونکہ جمعہ کے روزیکطرفہ ٹریفک کے تحت گاڑیوں کوجموں سے سری نگرآناتھا،اسلئے درجنوں مسافراورمال بردارگاڑیاں گزشتہ رات یاجمعہ کوعلی الصبح جموں سے سفرشروع کرچکی تھیں تاہم شاہراہ کی حالت ٹھیک نہ ہونے کے باعث ایسی سبھی گاڑیوں کومختلف مقامات پرروک دیاگیا،اوراُنھیں سفرجاری رکھنے کی اجازت نہیں دی گئی ۔پولیس وٹریفک پولیس کے ذرائع نے بتایاکہ بیکن نے مشینوں اورمزدوروں کوکام پرلگادیاہے جومختلف مقامات پرگرآئیں پسیوں اورمٹی کے تودوں وغیرہ کوہٹانے میں لگے ہوئے ہیں ۔تاہم ذرائع نے بتایاکہ تازہ بارشیں ہونے کے بعدنزدیکی پہاڑیوں سے برفانی ومٹی کے تودے ،پسیاں وچٹانیں گرآنے کااندیشہ بڑھ گیاہے ،اسلئے صورتحال کامکمل جائزہ لینے کے بعدہی سری نگرجموں شاہراہ کوگاڑیوں کیلئے کھول دیاجائیگا۔اُدھرمعلوم ہواکہ گزشتہ رات اورعلی الصبح جموں سے سری نگرکی جانب سفرشروع کرچکی سینکڑوں مسافراورمال بردارگاڑیوں کونگروٹہ ،اودھم پوراوردیگرکچھ مقامات پرروک دیاگیا۔ادھرمحکمہ موسمیات کے ترجمان نے بتایاکہ دوران شب شمالی کشمیرمیں سادھناٹاپ ،فرکیاں ٹاپ اورزیڈگلی جیسے اوپری مقامات پرہلکی تادرمیانہ درجے کی برف باری ہوجانے کے بعدکرناہ کوکپوارہ سے ملانے والی شاہراہ کوگاڑیوں کی آمدورفت کیلئے پھربندکردیاگیا۔معلوم ہواکہ سرحدی تحصیل ٹنگڈارکوضلعی کپوارہ سے جوڑنے والی اس واحدشاہراہ کے بالائی مقامات پرہلکی تادرمیانہ درجے کی برف باری ہوئی جبکہ نزدیکی علاقوں میں بارشیں بھی ہوئیں ،اس وجہ سے سنیچرکی صبح اس پُرخطر شاہراہ کوبندکردیاگیااورکسی بھی گاڑی کوسفرکی اجازت نہیں دی گئی ۔کپوارہ پولیس کے ذرائع نے بتایاکہ سادھناٹاپ جیسے مقامات پرتازہ برف بارہ ہوجانے کے بعدکرناہ ،کپوارہ شاہراہ کوبندکیاگیا۔انہوں نے کہاکہ تازہ برف باری اوربارشیں ہوجانے کے بعدکرناہ ،کیرن،مژھل اورٹنگدارجیسے بالائی علاقوں کازمینی رابطہ کپوارہ سے کٹ کررہ گیاہے ۔ذرائع نے بتایاکہ تازہ برف باری اور بارشیں ہونے کے بعد برفانی ومٹی کے تودے ،پسیاں وچٹانیں گرآنے کااندیشہ بڑھ گیاہے ،اسلئے صورتحال کامکمل جائزہ لینے کے بعدہی کپوارہ ،کرناہ شاہراہ کوگاڑیوں کیلئے کھول دیاجائیگا۔خیال رہے موسم سرماکی پہلی برف باری ہونے کے بعدسرینگرلیہہ شاہراہ ،گریزبانڈی پورہ شاپراہ اورمغل روڑماہ دسمبر2017سے بندپڑے ہیں ۔ادھرتازہ بارشیں ہونے کے بعدسری نگرسمیت وادی کے سبھی ضلعی وتحاصیل صدرمقامات کی سڑکوں ،گلیوں اوربازاروں میں پانی جمع ہوجانے کے باعث لوگوں کوعبورومرورمیں سخت مشکلات کاسامناکرناپڑا۔اس دوران محکمہ موسمیات نے جموں ،کشمیراورلداخ کے میدانی وبالائی علاقوں میں متواتربارش اورہلکی تادرمیانہ درجے کی برف باری ہونے کی تصدیق کرتے ہوئے یہ امکان ظاہرکیاکہ صبح سے موسمی صورتحال پھرمعمول پرآجائیگی ۔ادھر سری نگر کے شمال میں 55 کلو میٹر کی دوری پر واقع عالمی شہرت یافتہ سکی ریزارٹ گلمرگ میں قریب چار انچ تازہ برف کھڑی ہوگئی ہے۔ تازہ برف باری کے نتیجے میں گلمرگ میں موجود سیاحوں اور سکی کھلاڑیوں کے چہرے خوشی سے کھل اٹھے ہیں۔ گلمرگ سے ایک ہوٹل مالک نے یو این آئی کو فون پر بتایا ’تازہ برف باری کا سلسلہ گذشتہ نصف شب کو شروع ہوا۔ صبح کے وقت تک قریب چار انچ تازہ برف کھڑی ہوگئی۔ کٹھن موسمی حالات کے باوجود یہاں موجود سیاں اور سکی کھلاڑی سیر سپاٹے میں مصروف ہیں۔ سیاحوں میں بیشتر ایسے ہیں جنہوں نے پہلی بار برف کو گرتے ہوئے دیکھا ہے‘۔ محکمہ موسمیات کے ترجمان نے بتایا کہ گلمرگ میں گذشتہ رات کم سے کم درجہ حرارت منفی 1 اعشاریہ 6 ڈگری ریکارڈ کیا گیا۔ سری نگر کے جنوب میں قریب 100 کلو میٹر کی دوری پر واقع مشہور سیاحتی مقام پہلگام میں گذشتہ رات سے بارشوں کا سلسلہ وقفہ وقفہ سے جاری ہے۔ پہلگام میں گذشتہ رات کم سے کم درجہ حرارت ایک اعشاریہ 9 ڈگری ریکارڈ کیا گیا ہے۔ پہلگام کے بالائی حصوں بشمول چندن واڑی، شیش ناگ، مہاگنس، پسو ٹاپ اور پنج ترنی میں درمیانہ سے بھاری درجہ کی برف باری ہوئی ہے۔ وسطی ضلع گاندربل میں واقع مشہور سیاحتی مقام سونہ مرگ میں برف باری کا سلسلہ وقفہ وقفہ سے گذشتہ رات سے جاری ہے۔ ادھر گرمائی دارالحکومت سری نگر میں بارشوں کا سلسلہ وقفہ وقفہ سے گذشتہ رات سے جاری ہے۔ سری نگر میں گذشتہ رات کم سے کم درجہ حرارت 6 اعشاریہ 8 ڈگری ریکارڈ کیا گیا ہے۔ خطہ لداخ کے کرگل اور لیہہ میں گذشتہ رات کم سے کم درجہ حرارت بالترتیب منفی 4 اعشاریہ 3 اور منفی صفر اعشاریہ 4 ڈگری ریکارڈ کیا گیا ہے۔

مزید دیکهے

متعلقہ خبریں