مین ٹائون ترال میں بندوق بردار نمودارنوجوان کو گولیوں کا نشانہ بنایاگیا

سرینگر/یو پی آئی/بندوق برداروں نے شام دیر گئے ترال میںایک نوجوان پر فائرنگ کی جس کے نتیجے میں وہ شدید طورپر زخمی ہوا اور اُس کو نازک حالت میں اسپتال منتقل کیا گیا ۔ پولیس ذرائع نے اسکی تصدیق کرتے ہوئے کہاکہ آس پاس علاقوں کو محاصرے میں لے کر جنگجو مخالف آپریشن شروع کیا گیا ہے۔ مین ٹاون ترال میں اُس وقت سنسنی اور خوف ودہشت کاماحول پھیل گیا جب نامعلوم بندوق برداروں نے پسند اعجاز احمد شاہ ولد علی محمد پر نزدیک سے گولیاں چلائیں جس کے نتیجے میں وہ خون میں لت پت ہو کر نیچے گر پڑا۔ آس پاس موجود لوگوں نے زخمی شخص کو فوری طورپر نزدیکی اسپتال منتقل کیا تاہم ڈاکٹروں نے حالت نازک قرار دے کر سرینگر ریفر کیا ۔ یو پی آئی نے اس ضمن میں جب ترال پولیس کے ساتھ رابط قائم کیا تو انہوںنے اس بات کی تصدیق کی کہ مین ٹاون ترال میں اسلحہ برداروں نے ایک نوجوان پر گولیاں چلائیں ۔ پولیس کے مطابق آس پاس علاقوں کو محاصرے میں لے کر حملہ آوروں کی تلاش شروع کی گئی ہے۔اس دوران قصبے میں داخل ہونے والی گاڑیوں کی باریک بینی سے جہاں تلاشی کی گئی وہیں پر قصبے سے باہر جانیوالی گاڑیوں کے نمبر تک نوٹ کئے گئے ۔

مزید دیکهے

متعلقہ خبریں