ہندوپاک کے رہنما امن کے بارے میں سوچنا شروع کریں:ڈاکٹر فاروق عبداللہ

جموں/یو این آئی / نیشنل کانفرنس کے صدر و رکن پارلیمان ڈاکٹر فاروق عبداللہ نے کہا کہ جب تک ہندوستان اور پاکستان امن کے بارے میں سوچنا شروع نہیں کریں گے تب تک ریاست کی سرحدوں پر گولہ باری کا سلسلہ جاری رہے گا۔ انہوں نے کہا کہ یہ ’امن‘ کے بارے میں /جاری صفحہ نمبر ۱۱پر
 سوچنے کا موزون وقت ہے۔ فاروق عبداللہ نے منگل کے روز یہاں ایک تقریب کے حاشئے پر نامہ نگاروں سے بات کرتے ہوئے کہا ’جب تک دونوں ملک امن کے بارے میں سوچنا شروع نہیں کریں گے ، تب تک سرحدوں پر گولہ باری ہوتی رہے گی۔ اگر وہ امن کے بارے میں نہیں سوچیں گے تو فائرنگ بھی نہیں رکے گی‘۔ انہوں نے کہا کہ سرحدوں پر گولہ باری آرپار رہائش پذیر لوگوں کے لئے وبال جان بن گئی ہے۔ ان کا کہنا تھا ’سرحد کے دونوں طرف لوگ پھنسے ہوئے ہیں۔ دونوں حکومتوں کو امن کے بارے میں سوچنا شروع کرنا چاہیے۔ جوں ہی وہ سوچنا شروع کریں گے، سرحدوں پر امن بھی قائم ہوگا۔ دوسری صورت میں یہ گولہ باری نہیں رکے گی اور سرحد کے دونوں طرف لوگ متاثر ہوتے رہیں گے‘۔

مزید دیکهے

متعلقہ خبریں