مشرقی غوطہ میں مرنے والوں کی تعداد500تک پہنچ گئی

سرینگر/ مانٹرنگ/ 25فروری/ انسانی حقوق کے کارکنوں کا کہنا ہے کہ شامی حکومت کے فوجی دستوں اور فضائیہ نے باغیوں کے زیر قبضہ شہر مشرقی غوطہ پر مسلسل ایک ہفتہ بمباری کی ہے جس میں اب تک پانچ سو عام شہری مارے جا چکے ہیں۔ برطانیہ میں قائم سیرین آبزرویٹری گروپ کا کہنا ہے کہ مشرقی غوطہ میں مرنے والوں میں 121 بچے شامل ہیں۔ روسی افواج کی مدد سے شامی حکومت کی فورسز نے اٹھارہ فروری کو بمباری شروع کی تھی۔ اقوامِ متحدہ کی سیکورٹی کونسل کو فائربند کی کوششوں میں مشکلات کا سامنا ہے۔ اس معاملے پر ووٹنگ جمعرات کو ہونا تھی لیکن اسے کئی بار موخر کر دیا گیا ہے۔ سنیچر کو سیرین آبزرویٹری گروپ نے کہا ہے کہ کم از کم 20شہری ہلاک ہوئے ہیں جن میں سے 17کا تعلق دوما کے علاقے سے ہے۔ جس کے بعد ایک ہفتے کے اندر مرنے والوں کی تعداد 500تک پہنچ گئی ہے۔ سیرین آبزرویٹری گروپ کا کہنا ہے کہ بمباری شام اور روسی جیٹ طیارے کررہے ہیں تاہم روس تنازعے میں براہ راہست شمولیت سے انکار کرہا ہے۔

مزید دیکهے

متعلقہ خبریں