کٹھوعہ کیس میں فوری انصاف نہیں کیا گیا تو ریاست کو آگ لگ جائے گی، حکومت کو تاجروں کا انتباہ

سرینگر/کشمیر اکانومک الائنس کے چیئر مین محمد یٰسین خان نے حکومت کو متنبہ کیا ہے کہ اگر کھٹوعہ کی کمسن بچی کی عصمت دری اور قتل کے مجرموں کو فوری طور پر انکے کیفر کردار تک نہیں پہنچایا گیا اور مظلوم بچی کے لواحقین کو فوری انصاف فراہم نہیں کیا گیا تو اسکے سنگین نتائج برآمد ہونگے ، یہاں تک کہ جموں کشمیر کی ریاست کو ’’آگ لگ جائے گی ۔‘‘ یٰسین خان کا الزام تھا کہ اس گھنائونے جرم کے مجرموں کو بچانے اور اس معاملے کو دفن کرنے کی کوششیں کی جارہی ہیں۔ سرینگر میں ایک پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے حاجی محمد یٰسین خان، جو کشمیر ٹریڈرس اینڈ مینوفیکچررس فیڈریشن کے سربراہ بھی ہیں ، نے کہا ہے کہ کھٹوعہ میں 8سالہ آصفہ کی عصمت دری اور قتل کے الزام میں گرفتار کئے گئے وردی پوش مجرم کو بچانے کے لئے سماج کا ایک طبقہ جس طرح اس کے دفاع میں آگیا ہے ، وہ انتہائی شرمناک اور اس کی وجہ سے انسانیت شرمسار ہوگئی ہے۔انہوں نے کہا کہ اس متنازعہ ریاست میں حق و انصاف کی بات کرنا دشوار ہوتا جارہا ہے۔ انہوں نے حکومت کی جانب سے کھٹوعہ کیس کو سی بی آئی کو سونپنے کے اعلان پر اپنے ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ شوپیاں میں آسیہ اور نیلوفر کی عصمت دری اور قتل کے معاملے کو بھی سی بی آئی کے سپرد کیا گیا تھا، لیکن بعد میں سب نے دیکھا کہ اس کیس کو کیسے گول کیا گیا۔
انہوں نے کہا سی بی آئی یہاں اپنی کریڈیبلٹی کھو چکا ہے۔ انہوں نے کہا کھٹوعہ کیس کو بھی دبانے کی کوشش کی جارہی ہے۔تاہم محمد یٰسین خان نے واضح کردیا کہ اس کیس میں فوری طور پر انصاف فراہم نہیں کیا گیا تو اس کے نتیجے میں ’’ریاست میں آگ لگ جائے گی۔‘‘ انہوں نے کہا کہ کسی مخصوص مذہب یا طبقے کا معاملہ نہیں ہے بلکہ انصاف کا معاملہ ہے۔ ایک گھناونا اور رونگٹھے کھڑے کردینا والا جرم ہو ا ہے اور لازم ہے کہ مجرموں کو کڑی سے کڑی سزا ملے۔ انہوں نے کہا اگر یہ واقعہ وادی میں کسی اقلیتی طبقے کی بچی کے ساتھ بھی ہوا ہوتا وہ تب بھی اسی طرح حق اور انصاف کے لئے پوری قوت کے ساتھ کھڑے ہوجاتے ۔ تاہم حاجی یٰسین خان نے یہ بھی کہا کہ اگر کھٹوعہ معاملے میں حکومت فوری طور پر انصاف فراہم کرے گی تو اس کے بعد ہم اس معاملے میں خاموش رہیں گے لیکن اگر ایسا نہیں ہوا تو ہمارا ضمیر ہمیں خاموش تماشائی بنے رہنے کی اجازت نہیں دے گا۔انہوں نے کہا اس معاملے کو نہ ہی سیاست کی نذر ہونے دیا جائے گا اور نہ ہی اسے دبانے کی اجازت دی

مزید دیکهے

متعلقہ خبریں