چیف جسٹس نے انڈکشن ترقیاتی تربیتی پروگرام کا افتتاح کیا

جموں/جموں وکشمیرسٹیٹ جوڈیشل اکیڈیمی کی طرف سے حال ہی میں تعینات کئے گئے سول ججوں کے لئے ایک ماہ طویل انڈکشن تربیتی پروگرام کی شروعات کی۔اس پروگرام کا افتتاح چیف جسٹس جے اینڈ کے ہائی کورٹ جسٹس بدردُریز احمد نے چیئرمین جے اینڈ کے سٹیٹ جوڈیشنل اکیڈیمی جسٹس آلوک ارادھے کے ہمراہ کیا۔اس موقعہ پر ممبر جے اینڈ کے سٹیٹ جوڈیشنل اکیڈیمی جسٹس جنک راج کوتوال ، ممبر جے اینڈ سٹیٹ جوڈیشنل اکیڈیمی جسٹس ایم کے ہانجورہ ، ڈائریکٹر جے کے ایس جے اے عبدالرشید ملک ،رجسٹرار ، پرنسپل ، جوڈیشنل آفیسر ، ریسورس پرسن اور حال ہی میں تعینات کئے گئے سول جج ﴿ جونئیر ڈویژن﴾ بھی موجود تھے۔اس موقعہ پر ڈائریکٹر جے کے ایس جے اے نے حال ہی میں تعینات کئے گئے سول ججوں کا خیر مقدم کیا ۔انہوں نے اس طرح کا تربیتی پروگرام منعقد کرنے کے لئے چیف جسٹس کا شکریہ ادا کیا۔ انہوںنے شرکا ٔ کو تربیتی پروگرام کے مقاصد کے بارے میں جانکاری دی۔ انہوں نے امید ظاہر کی کہ یہ تربیت پانے کے بعد نئے جج صاحبان کے اعتماد میں اضافہ ہوگا اور وہ کامیابی کے ساتھ عدالتوں میں مختلف حالات کا مقابلہ کرسکیں گے۔تقریب کا افتتاح کرنے کے بعد چیف جسٹس نے کہا کہ ایک جج کے لئے کوئی بھی مقابلہ نہیں ہونا چاہیئے تاہم اسے انصاف کے تقاضوں کو ہر صورت میں پورا کرنا چاہیئے۔چیف جسٹس نے ججوں کی سا لمیت پر زور دیتے ہوئے کہا کہ یہ عدالتی نظام کا ایک خاصا ہے اور اپنی سوچ کے مطابق صداقت کے اصولوں کی پاسداری کرنا بھی لازمی ہے۔
انہوں نے کہا کہ موثر ڈھنگ سے انصاف کی فراہمی کو یقینی بنایا جانا چاہیئے۔

مزید دیکهے

متعلقہ خبریں