جنوبی کشمیر کی کئی بستیوں کی ناکہ بندی پر لوگ مشتعل

تشدد آمیز واقعات کے دوران ٹیئر گیس شیلنگ اور ہوائی فائرنگ ، سرگرم عسکریت پسندوں کیخلاف بڑے پیمانے پر کریک ڈائون: دفاعی ذرائع
سرینگر/نیاز حسین / جے کے این ایس/کریم آباد پلوامہ میں جنگجو مخالف آپریشن کے دوران تشدد بھڑک اٹھا ، مشتعل ہجوم کو منتشر کرنے کیلئے سیکورٹی فورسز نے ٹیر گیس شلنگ کے ساتھ ساتھ ہوائی فائرنگ بھی کی ۔ لوگوں کے تیور دیکھ کر سیکورٹی فورسز علاقہ سے نکل گئے ۔ دفاعی ذرائع کے مطابق جان ومال کو تحفظ فراہم کرنے کیلئے سیکورٹی فورسز نے آپریشن کو ملتوی کیا ۔ دریں اثنا کیلر اور بامنو شوپیاں میں بھی گھر گھر تلاشی لی گئی جس دوران مکینوں کے شناختی کارڈ باریک بینی سے چیک کئے گئے۔ عسکریت پسندوں کی موجودگی کی اطلاع موصول ہونے کے بعد سیکورٹی فورسز نے جونہی کریم آباد پلوامہ گائوں کو محاصرے میں لے کر جنگجو مخالف آپریشن شروع کیا گیا۔اس دوران لوگ مشتعل ہوئے اور سڑکوں پر آکر فورسز کے خلاف احتجاجی مظاہرئے کئے ۔ نمائندے کے مطابق نوجوانوں کی کثیر تعداد نے سیکورٹی فورسز پر چاروں طرف سے شدید پتھراو کیا جس کے نتیجے میں کریم آباد پلوامہ میں خوف ودہشت کا ماحول پھیل گیا اور لوگ محفوظ مقامات کی طرف بھاگنے لگے۔اس دوران فورسز نے مظاہرین کو منتشر کرنے کیلئے نہ صرف ٹیر گیس شلنگ کی بلکہ کئی منٹوں تک ہوائی فائرنگ بھی کی جس کی وجہ سے آس پاس علاقوں میں خوف ودہشت کا ماحول پھیل گیا اور لوگ محفوظ مقامات کی طر ف بھاگنے لگے۔ نمائندے کے مطابق سیکورٹی فورسز اور مظاہرین کے درمیان کافی دیر تک تصادم آرائیوں کا سلسلہ جاری رہا ۔ دفاعی ذرائع کے مطابق جنگجوئوں کی موجودگی کی اطلاع ملنے کے بعد سیکورٹی فورسز نے جونہی کریم آباد پلوامہ گائوں کو محاصرے میں لے کر جنگجو مخالف آپریشن شروع کیا اس دوران سماج دشمن عناصر نے سیکورٹی فورسز پر پتھراو کیا جنہیں منتشر کرنے کیلئے اشک آور گیس کے گولے داغے گئے ۔ دفاعی ذرائع کے مطابق لوگوں کے جان ومال کو تحفظ فراہم کرنے کیلئے سیکورٹی فورسز کو علاقہ سے واپس بلایا گیا جس کے بعد حالات معمول پر آئے ۔ دریں اثنا پہاڑی ضلع شوپیاں کے بامنو اور کیلر گائوں کو مصدقہ اطلاع ملنے کے بعد سیکورٹی فورسز نے گھر گھر تلاشی لی جس دوران مکینوں کے شناختی کارڈ باریک بینی سے چیک کئے گئے ۔ دفاعی ذرائع نے اسکی تصدیق کرتے ہوئے بتایا کہ تلاشی آپریشن پُر امن طورپر اختتام پذیر ہوا۔ ادھر ذرائع سے معلوم ہوا ہے کہ جنوبی کشمیر میں سرگرم عسکریت پسندوں کو مار گرانے کے وزارت دفاع نے احکامات صادر کئے ہیں۔ ذرائع نے بتایا کہ سردی میں اضافہ ہونے کے ساتھ ہی جنوبی کشمیر کے رہائشی علاقوں میں جنگجوئوں کی نقل و حرکت میں اضافہ دیکھنے کو ملا ہے جس کو مد نظر رکھتے ہوئے سیکورٹی فورسز کو چوبیس گھنٹے متحرک رہنے کے احکامات صادر کئے گئے ہیں۔ ﴿ جاری صفحہ ۱۱ پر﴾
ذرائع کے مطابق سرگرم عسکریت پسندوں کو مار گرانے کیلئے سیکورٹی فورسزنے تمام تر اقدامات اٹھا رہے ہیں جبکہ لوگوں کو بھی اطلاع دی گئی ہے کہ وہ مشتبہ افراد کی موجودگی کے بارے میں فوری طور پر پولیس کو آگاہ کریں۔

مزید دیکهے

متعلقہ خبریں