جی ایس ٹی کے اطلاق سے کشمیر میں حالات مزید بگڑگئےفورسز پر حملے ہورہے ہیں اور پتھرائو بھی جاری ہے :یشونت سہنا

نئی دہلی /بی جے پی کے سینئر لیڈر اور سابق مرکزی وزیر نے جی ایس ٹی قانون میں ترامیم کرنے کا مرکزی حکومت سے مطالبہ کرتے ہوئے کہاکہ ’’ بی جے پی کے کئی سینئر لیڈر دعویٰ کر رہے ہیں کہ نوٹ بندی سے کشمیر وادی میں عسکریت پسندی اور سنگبازی کے واقعات میں کمی واقع ہوئی ہے ۔ تاہم میں اُن سے کہنا چاہتاہوں کہ ایسا ہرگز نہیں ہوا ہے‘‘۔ جے ڈی یو کی جانب سے منعقد کئے گئے سمینار سے خطاب کرتے ہوئے بی جے پی کے سینئر لیڈر اور سابق مرکزی وزیر یشونت سنہا نے کہاکہ نوٹ بندی سے کالا دھن کے لین دین میں کوئی کمی واقع نہیں ہوئی ہے۔ انہوںنے کہاکہ بی جے پی کے کئی لیڈر دعویٰ کر رہے ہیں کہ نوٹ بندی سے وادی کشمیر میں عسکریت پسندی اور سنگبازی کے واقعات میں کمی واقع ہوئی ہے تاہم ایسا نہیں ہے۔ انہوں نے کہاکہ بی جے پی کے لیڈروں کویہ جان لینا چاہئے کہ وادی کشمیر میں اب بھی سیکورٹی فورسز پر حملے ہو رہے ہیں /جاری صفحہ نمبر۱۱پر
جبکہ سنگبازی کے واقعات بھی رونما ہور ہے ہیں۔ یشونت سنہا نے جی ایس ٹی لاگو کرنے پر بھی سوالات اٹھاتے ہوئے کہاکہ جی ایس ٹی میں شامل کئی شقوں پر تاجر برادری نے تحفظات کا اظہار کیا ہے اور مرکزی حکومت کو سینئر بیروکریٹوں کے ساتھ صلاح مشورہ کرکے جی ایس ایس ٹی قانون میں ترامیم کرنی چاہئے۔

مزید دیکهے

متعلقہ خبریں