مزدوروں کا پارلیمنٹ پر دوسرے دن بھی دھرنا

نئی دہلی/یو این آئی/ ملک کی بڑی مزدور تنظیموں نے بے روزگاری اور پبلک سیکٹر وں میں سرمایہ کشی اور حکومت کی اقتصادی پالیسیوں کی مخالفت میں اپنے 12نکاتی مطالبات کو لے کر پارلیمنٹ ہاؤس کے قریب کل دوسرے دن بھی دھرنا مظاہرہ جاری رکھا۔دھرنا میں ہریانہ، آندھرا پردیش، تلنگانہ،شمالی مدھیہ پردیش، گجرات، گوا، چھتیس گڑھ، آسام، میگھالیہ اور بہار کے کارکنوں نے حصہ لیا۔ یہ سب مزدور، تعمیرات، منریگا ، روایتی صنعتوں اور خوانچہ لگانے والوں وغیرہ سے متعلق ہیں۔ کل دھرنا پہلے دن پنجاب کے مزدور، چندی گڑھ ، مغربی اتر پردیش، کیرل، تامل ناڈو، پڈوچیری، راجستھان، تریپورا اور منی پور کے کارکنوں نے کل مظاہرہ میں حصہ لیا تھا۔ یہ تمام کارکن پبلک سیکٹر کے زیر انتظام، مرکزی اور ریاستی حکومتوں، تعلیمی اداروں، بینکوں، انشورنس، ٹیلی مواصلات، صنعت، ریلوے ، دفاعی اور ٹرانسپورٹ کے شعبوں سے وابستہ تھے ۔ حکومت کے ساتھاپنے 12نکاتی مطالبات کے تعلق سے مذاکرات سے کوئی ٹھوس نتائج نہ نکلنے کی وجہ سے مزدور تنظیموں نے پارلیمنٹ ہاؤس پر تین روزہ مظاہرہ کرنے کا فیصلہ کیا ہے ۔اس میں، مختلف علاقوں کے کارکن تین دنوں میں حصہ لیں گے ۔

مزید دیکهے

متعلقہ خبریں