دریائے جہلم میں مچھلیاں اور محکمہ فشریز,

,

 22اکتوبر بروز اتوار سہ پہر کے قریب لوگ اس وقت حیران رہ گئے جب انہوں نے نواکدل کے قریب دریاے جہلم میں بے شمار مچھلیوں کو پانی کی سطح پرپایا ان میں سے بیشتر مردہ تھیں جبکہ بہت سی مچھلیاں جو زندہ تھیں بھی آہستہ آہستہ موت کے منہ میں چلی گئیں۔ لوگوں کا کہنا ہے کہ یہ ایک عجیب سماں تھا۔ کسی کی سمجھ میں یہ نہیں آرہاتھا کہ اس کی اصل وجہ کیاتھی۔ مقامی لوگوں نے انکشاف کیا کہ صرف نواکدل سے چھتہ بل ویر تک ہی جہلم میں مچھلیوں کی یہ حالت دیکھی گئی۔ چنانچہ دریا کے دونوں کناروں پر لوگوں کا اژدھام جمع ہوگیا جن میں سے بعض مچھلیاں پکڑنے لگے اور بعض ان کو ہاتھوں میں لے کر ان کی حالت کا اندازہ کرنے لگے لیکن ایک بات جس کا سب لوگوں نے مشاہدہ کیا وہ یہ تھا کہ ان کے منہ سے جھاگ نکل رہی تھی اور وہ اس طرح پانی کی سطح پرمچل رہی تھیں جیسے وہ درد میں مبتلاتھیں۔ موقعے پر متعلقہ محکمے کا کوئی بھی افسر یاماہر چونکہ موجود نہیں تھااسلئے اس کی اصل وجہ بھی معلوم نہیں ہوسکی لیکن یہ بات طے ہے کہ اس کی وجہ شایدجہلم کا گندہ پانی ہوسکتا ہے جس میں روزانہ ہرجگہ گندگی اور غلاضت ڈالی جاتی ہے جس سے مچھلیوں کی ایسی حالت ہوگئی لیکن اس کے ساتھ ہی محکمہ فشریز پر بھی انگلیاں اٹھائی جانے لگیں کیونکہ اس محکمے کی کارکردگی روز اول سے ہی غیر اطمینان بخش رہی ہے۔ کیونکہ پوری وادی میں مچھلیوں کی پرداخت دیکھ ریکھ وغیرہ میں یہ محکمہ حد سے زیادہ غفلت شعاری برت رہا ہے۔ مختلف فش فارموں میںجو گارڈ اور دوسرا عملہ تعینات ہے وہ بھی اپنے فرایض کی انجام دہی میں دلچسپی نہیں برت رہا ہے۔ سالہاسال سے مختلف مقامات پر ندی نالوں، دریاوں اور فارموں میں مچھلیاں پکڑنے کیلئے بلیچنگ پاوڈر استعمال کیاجارہا ہے جو کہ سراسر غیر قانونی ہے اور جس سے پانی زہریلا بن جاتا ہے اس کی طرف متعدد مرتبہ متعلقہ حکام کی توجہ مبذول کروائی گئی لیکن سب بے سود۔ اس طرح کی خبریں اکثر شایع کی جاتی رہی ہیں کہ مچھلیاں پکڑنے کیلئے پانی میں کرنٹ ڈالی جاتی ہے یہ بھی غیر قانونی طریقہ ہے اس کو روکنے کیلئے کوئی کاروائی نہیں کی گئی۔ یہ بات بھی باعث تشویش ہے کہ جھیل ڈل میں بھی لوگوں کے مطابق مچھلیاں پکڑنے کیلئے غیر قانونی ذرایع استعمال کئے جاتے ہیں۔ جو لوگ ایسا کرتے ہیں ان کیخلاف آج تک کوئی کاروائی کیوں نہیں کی گئی جبکہ اس بار ے میں فشریز حکام کو علمیت ہے لیکن وہ خاموش ہیں۔ لیکن اب جبکہ دریاے جہلم میں بے شمار مچھلیاں سطح آب پر نمودار ہوگئیں اور مرگئیں اس کے بارے میں محکمے کو وضاحت کرنی چاہئے کہ ایسا کیوں ہوا ہے کیونکہ لوگ اس بارے میں جاننا چاہتے ہیں کہ اصل حقایق کیا ہیں۔ کیا اس کی وجہ جہلم کے پانی میں پائی جانے والی گندگی یا کچھ اور ہے ۔ متعلقہ حکام کو اس سارے معاملے سے پردہ اٹھانا ہوگا اور اس بات کا لوگ ان سے جواب مانگتے ہیں کہ وادی بھر میں غیر قانونی طریقوں سے کیوں مچھلیاں پکڑنے والوں کو کھلی چھوٹ دی جاتی ہے۔ اور جو ایسا کرتے ہیں ان کو کیوں سزا نہیں دی جاتی ہے جس کے وہ مستحق ہیں ۔

,
مزید دیکهے

متعلقہ خبریں