شمالی اور وسطی کشمیر میں ژالہ باری اور تیز آندھی میوہ باغات تباہ، دھان کی فصل کو بھی شدید نقصان،کسان اور باغ مالکان پریشان

سر ینگر/ اے پی آ ئی/یو پی آئی/لنگیٹ کے ایک درجن سے زیادہ علاقوں میں اس وقت ماتم بچھ گئی جب سہ پہر کو موسم نے کروٹ لی اور بادل گرجنے کے بعد زور دار ژالہ بھاری ہو ئی جس کے نتیجے میںدھان کی فصل اور میوہ جات کو 100%نقصان پہنچا ۔ژالہ بھاری کے دوران کسان کھیتوں کھلیانوں کی طرف دوڑ پڑے اور ناگہا نی آ فت سے ہو ئے نقصان پر خون کے آ نسو رونے پر مجبور ہو ئے ۔ضلع انتظا میہ نے ژالہ بھاری کی تصد یق کر تے ہو ئے کہا کہ ہارٹی کلچراورایگریکلچر کی ٹیموں کو روانہ کیا جا ئے گا تا ہم ژالہ بھاری سے ہو ئے نقصان کا تخمینہ لگا کر سرکار کو رپورٹ پیش کی جا سکے ، ہندوارہ اور لنگیٹ کے ایک درجن سے زیادہ علاقوں جن میںماور ،قلم آ باد ،آڈورہ ،درنگسو ،شاہ نگری ،ہرل ،مو نہ بل ،لاوسہ ،سرہا مہ ،نوگام ،پتھواری ،مقام ،راجوار ،باقی اقر ،بینی پورہ ،ڈلی پورہ ،سر مرگ ،شادی گام اور لچھی پورہ شامل ہے میں بادل گرجنے کے بعد زور دار ژالہ باری ہو ئی جسکے نتیجے میںدھان اور دوسری فصلوں کے علاوہ میوہ جات کو نقصان پہنچا ۔نما ئندے کے مطابق کئی منٹوں تک جاری رہنے والی اس ژالہ بھاری نے ایک درجن سے زیادہ کے کسا نوں کی سال بھرکی کمائی کو تباہ و برباد کر کے رکھ دیا ۔ژالہ بھاری کے دوران متعلقہ علاقوں کے مرد و زن بوڑھے اور بچے اپنے گھروں سے باہر آ ئے اور انہوں نے ناگہا نی آ فت سے ہو ئے نقصان کو قہر الہٰی قرار دیتے ہو ئے کہا کہ وہ نان شبینہ کے محتاج بن گئے ۔ادھرضلع انتظا میہ نے لنگیٹ ہندوارہ کے کئی علاقوں میں شدید ژالہ بھاری کی تصد یق کرتے ہو ئے کہا کہ ایگریکلچر ہارٹی کلچر کی ٹیموں کو جلد ہی روانہ کیا جا ئے گا تا کہ فصلوں اور میوہ جات کو ہو ئے نقصان کا تخمینہ لگا کر حکومت کو رپورٹ پیش کی جا سکے ۔ ادھر سہ پہر کے بعد وسطی ضلع بڈگام کے کئی علاقوں میں تیز آندھی کے ساتھ ہی اولے گر آئے جس کے نتیجے میں سیب کے باغات کو شدید نقصان پہنچا۔ مقامی لوگوں نے بتایا کہ موسلا دھار بارشوں کے ساتھ ساتھ اولے گرنے کے نتیجے میں درختوں سے سبھی سیب نیچے گر آئے اور اس طرح مالکان باغات کو کروڑوں روپیہ کا نقصان ہوا ہے۔ معلوم ہوا ہے کہ وسطی ضلع بڈگام میں ناشپاتی ، سیب کی فصل تیار اور 15ستمبر کے بعد سیب کو درختوں سے اُتار کر انہیں ملک کی مختلف منڈیوں کو پہنچایا جاتا ہے، بڈگام کے چیک کاوسہ ، کاوسہ خالسہ ، نارہ بل ، مازہامہ ، بیروہ اور ماگام میں کئی منٹوں تک اولے گرے جس کے نتیجے میں سیب کے باغات ویرانی کا منظر پیش کرنے لگیں۔ چچلورہ ،اگرکلاں ،گوم احمد پورہ،گوئیگام ،کانہامہ،مکہ ہامہ ،بدرن ،ادینہ اور ملحقہ دیہات میں بھی شدید بارشوں سے کھڑی فصلوں کو نقصان پہنچا ہے۔

مزید دیکهے

متعلقہ خبریں