سمارٹ میٹروں کے ذریعے تمام صارفین کو  میٹر کے دائرے میں لانے اور سمارٹ گرڈ قائم کرنے کو منظوری دی گئی

سری نگر/بجلی کی ترسیل اور تقسیم کاری کے عمل کے دوران نقصانات کو کم کرنے کیلئے ریاستی انتظامی کونسل ، جو آج گورنر این این ووہرا کی صدارت میں منعقد ہوئی نے 9.25 لاکھ الیکٹرانک میٹر حاصل کرنے کو منظوری دی ہے تا کہ ریاست کے دیہی اور شہری علاقوں میں تمام صارفین کو میٹر کے دائرے میں لایا جا سکے ۔ اس پر 282.15 کروڑ روپے کی لاگت آنے کا اندازہ ہے ۔ میٹنگ کے دوران میٹر حاصل کرنے کیلئے رورل الیکٹر سٹی کارپوریشن پاور ڈسٹری بیوشن کمپنی لمٹیڈ کو میٹر فراہم کرنے کیلئے بھی منظوری دی گئی ۔ اس میٹنگ میں شہری علاقوں میں میٹروں کے رکھ رکھاؤ کیلئے او اینڈ ایم سروسز کی خدمات حاصل کرنے کو منظوری دی گئی جس پر 44.53 کروڑ روپے تخمینہ لاگت آئے گی ۔ کونسل نے میٹر ریڈنگ حاصل کرنے اور بل تیار کرنے کیلئے 61.32 کروڑ روپے کی تخمینہ لاگت کو بھی منظوری دی ۔ اس کے علاوہ ریاست کے مرکزی قصبوں اور دیہی علاقون کیلئے دو لاکھ سمارٹ میٹر حاصل کرنے کیلئے 126.54 کروڑ روپے کی لاگت کو بھی منظوری دی گئی ۔ ریاستی انتظامی کونسل نے ریاست میں 140.55 کروڑ روپے کی تخمینہ لاگت سے سمارٹ گرڈ پروجیکٹ کی عمل آوری کیلئے پاور گرڈ کارپوریشن آف انڈیا کی خدمات حاصل کرنے کو منظوری دی ۔ اس گرڈ پروجیکٹ کی کئی منفرد خصوصیات ہوں گی ۔ ریاست کے 19 قصبوں /صنعتی علاقوں میں سمارٹ گرڈ پروجیکٹ کی عمل آوری کا کام پی جی سی آئی ایل کو سونپا جا رہا ہے ۔ یہ بات قابلِ ذکر ہے کہ یہ منصوبہ پہلے ہی ریاستی انتظامی کونسل کے سامنے رکھا گیا تھا کونسل نے فیصلہ لیا تھا کہ اس منصوبے کا ایک کمیٹی جائیزہ لے گی جو محکمہ بجلی کے انچارج مشیر اور خزانہ ، منصوبہ بندی اور پی ڈی ڈی کے انتظامی سیکرٹریوں پر مشتمل ہے ۔ اس کمیٹی کی سفارشات کو مدِ نظر رکھتے ہوئے ریاستی انتظامی کونسل نے اس منصوبے کو منظوری دی ۔
جس میں موجودہ 341 میٹر ریڈروں کی خدمات سارے عمل کو انجام دینے کیلئے حاصل کی جائیں گی ۔ ریاست کو فی الوقت بجلی کی تقسیم اور ترسیل کے دوران نقصانات کا چیلنج درپیش ہے یہ نقصانات 2016-17 کے دوران 60 فیصد تھے ۔ اس نقصان کی وجہ سے بجلی کی حصولیابی اور مانگ میں کافی تفاوت پائی جاتی تھی ۔ ترسیل اور تقسیم کاری کے دوران نقصانات کو کم کرنا نہ صرف آمدن حاصل کرنے کیلئے ضروری ہے بلکہ یہ صارفین کو معیاری اور بلا خلل بجلی فراہم کرنے کیلئے بھی لازمی ہے ۔ 2019 تک ریاست کے تمام صارفین کو دن رات بلا خلل بجلی فراہم کرنا محکمے کا ہدف ہے جو تمام صارفین کو میٹرنگ کے دائرے میں لائے بغیر ممکن نہیں ہے ۔

مزید دیکهے

متعلقہ خبریں