عراقی فوج پناہ گزینوں کو غیر محفوظ علاقوں میں بھیج رہی ہے

امارات الفلوج/رائٹر/عراق میں فوج پناہ گزین کیمپوں سے لوگوں کو زبردستی غیر محفوظ علاقوں خصوصاً سنی اکثریتی علاقے الانبارمیں بھیج رہی ہے جس سے ان کی جان کو خطرہ پیدا ہوگیا ہے ۔ پناہ گزینوں اور راحت اور بچاؤاہلکاروں کا کہنا ہے کہ انتظامیہ وقت پر انتخابات کو یقینی بنانے کیلئے پناہ گزینوں کو ان کی مرضی کے خلاف زبردستی واپس بھیج رہی ہے ۔انتخابات کے لئے ضروری ہے کہ لوگ ووٹ دینے کیلئے اپنے آبائی علاقے میں رہیں۔اگر وہ اپنے گھروں کو نہیں لوٹتے ہیں تو انتخابات میں تاخیر ہوسکتی ہے ۔ ایک بچاؤ اہلکار نے کہا،لوگوں کا لوٹنا محفوظ نہیں ہے ۔بلا شبہ لوگ کھلے عام اس کے خلاف آواز نہیں اٹھا رہے ہیں کیونکہ ان کے پاس کوئی دوسرا راستہ نہیں ہے ۔وہ لوگ بندوق برداروں کے گروپ کے سامنے انکار نہیں کرسکتے ۔بچاؤ اہلکار نے نام شائع نہ کرنے کی شرط پر بتایا کہ21نومبر سے دو جنوری کے درمیان 2400سے پانچ ہزار پناہ گزینوں کو زبردستی غیر محفوظ علاقوں میں بھیجا گیا ہے ۔ دوسری جانب فوج نے لوگوں کو زبردستی واپس بھیجنے کے الزام کو بے بنیاد بتایا ہے ۔عراقی فوج کے ایک ترجمان نے کہا،ہماری پہلی ترجیح لوگوں کی حفاظت ہے ،ہمارا کام لوگوں کی حفاظت کرنا ہے ۔

مزید دیکهے

متعلقہ خبریں