پاک بھارت کرکٹ کا سیاست کی نذر ہونا افسوسناک ہے، رمیز راجہ، دونوں پڑوسی ممالک سے باہمی تعلقات میں بہتری لانے کا مطالبہ ،شعیب اختر

لاہور/کراچی /بھارت کی جانب سے باہمی کرکٹ سے ایک مرتبہ پھر انکار پر سابق پاکستانی کھلاڑیوں نے اپنے شدید ردعمل کا اظہار کیا ہے۔ سابق پاکستانی کپتان رمیز راجہ کا کہنا ہے کہ کرکٹ میچز کے حوالے سے بھارتی ہٹ دھرمی افسوسناک ہے جس سے خطے میں کھیل متاثر ہو رہا ہے۔ ان کا لاہور میں ایک تقریب کے دوران کہنا تھا کہ سیاست کو کھیل میں اتنا شامل نہ کیا جائے کہ اس کی روایات ہی دفن ہو جائیں۔ انہوں نے واضح کیا کہ دونوں ملکوں کے شائقین برسوں سے اس بات کا مطالبہ کر رہے ہیں کہ پاک بھارت مقابلوں کا اجرائ کیا جائے لیکن بھارتی حکومت ہی نہیں بلکہ بی سی سی آئی کی جانب سے بھی کوئی مثبت جواب نہیں ملا ہے۔ سابق پاکستانی فاسٹ بالر شعیب اختر نے پاک بھارت کشیدہ تعلقات کو مایوس کن قرار دیتے ہوئے دونوں پڑوسی ممالک سے مطالبہ کیا کہ وہ باہمی تعلقات میں بہتری لائیں تاکہ کم از کم کھیلوں کی سطح پر روابط بحال ہو سکیں۔ شعیب اختر کا کہنا تھا کہ کتنی بدقسمتی کی بات ہے کہ کرکٹ کی دو روایتی حریف ٹیمیں آپس میں صرف اس وجہ سے کرکٹ نہیں کھیل سکتیں کہ ان کے درمیان مقابلوں کو سیاست کی نذر کیا جا رہا ہے۔ راولپنڈی ایکسپریس کا کہنا تھا کہ پاک بھارت میچز کا نہ ہونا دونوں ملکوں کا نقصان ہے اور یہ بات بھارتی کرکٹ بورڈ کو سمجھنا چاہئے۔ شعیب اختر کا کہنا تھا کہ باہمی سیریز کو بحال نہ کر کے ان کرکٹ شائقین کے ساتھ بڑی زیادتی کی جارہی ہے جو بڑی شدت کے ساتھ دونوں ٹیموں کے درمیان مقابلے دیکھنا چاہتے ہیں۔

مزید دیکهے

متعلقہ خبریں